قوانین کے مطابق نئے کالج قایم کرنے کا عمل شروع کیا گیا

جموں//تعلیم کے وزیر سید محمد الطاف بخاری نے آج قانون ساز اسمبلی میں کلدیپ راج اور عثمان مجید کے کلب کئے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ریاستی حکومت نے حال ہی میں 17 نئے ڈگری کالج قایم کرنے کو منظوری دی ہے اور یہ کالج ریاست کے اُن علاقوں میں قایم کئے جائیں گے جہاں ابھی یہ سہولیات میسر نہیں ہیں ۔راجیو شرما کے سوال کا جواب دیتے ہوئے وزیر نے کہا کہ حکومت نے ڈائریکٹ کوٹہ کے تحت آسامیاں بھرتی ایجنسیوں کو بھیج دی ہیں تا کہ اکھنور حلقے سمیت تمام سرکاری سکولوں میں عملے کی کمی کو دور کیا جا سکے ۔ وزیر موصوف نے مزید کہا کہ حکومت پرائیویٹ تعلیمی اداروں کے فیس سٹریکچر میں معقولیت لانے کیلئے ایک قانون تیار کرنے کی خاطر ایک بل لانے پر سنجیدگی سے غور کر رہی ہے تا کہ وہ ناجائیز منافع خوری نہ کر سکیں ۔ محمد امین بٹ کے ایک اور سوال کا جواب دیتے ہوئے الطاف بخاری نے کہا کہ حکومت نے مڈل سکول ہیون لاسی پورہ کا درجہ 2009-10 میں ہائی سکول تک بڑھا دیا ہے ۔ایک اور رُکن کی طرف سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں وزیر نے کہا کہ کلگام ضلع کے مختلف تعلیمی زونوں میں لگ بھگ 738 سی پی ڈبلیو تعینات کئے گئے ہیں ۔ جاوید احمد بیگ کے سوال کا جواب دیتے ہوئے وزیر نے کہا کہ حکومت نے ڈگری کالج بارہ مولہ کو توسیع دینے کیلئے ملحقہ اراضی حاصل کرنے کے حوالے سے رکاوٹوں کو دور کیا ہے ۔