خانہ بدوش طبقہ کی فلاح وبہتری پر کونسل میں بحث ایسے کنبوں کو خصوصی راشن کارڈ فراہم کئے جائیں گے: ذوالفقار علی

اڑان نیوز
جموں// خوراک، شہری رسدات اور امور صارفین وقبائلی امور کے وزیر چوہدری ذوالفقار علی نے کل ایوان میں سریندر کمار چودھری کے بدلے سیف الدین بٹ کی جانب سے پوچھے گئے ایک سٹارڈ سوال پر کونسل کے چیئرمین حاجی عنائت علی کی طرف سے بحث کی اجازت ملنے کے بعد سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ حکومت ریاست میں قبائلی آبادی کی مجموعی ترقی کو یقینی بنانے کے لئے کئی اقدامات کر رہی ہے تا کہ ان کے معیار میں بہتری لائی جاسکے۔وزیر موصوف نے کہا کہ خانہ بدوش کنبوں کو پی ایچ ایچ زمرے کے تحت خصوصی راشن کارڈ جاری کئے جائیں گے تا کہ وہ این ایف ایس اے اور ایم ایم ایس ایف ای ایس کے تحت راشن حاصل کرسکیں۔ انہوں نے کہا کہ ایس ٹی طُلاب کے لئے اننت ناگ،کولگام، راجوری، کرگل اور پونچھ اضلاع میں پانچ ای ایم آر ایس منظور کئے گئے ہیں۔وزیر نے مزید کہا کہ10 نئے ٹرائبل کلسٹر ولیج منظور کئے گئے ہیں اور ہر ایک کلسٹر کے لئے10 کروڑ روپے مختص رکھے گئے ہیں۔ انہوں نے کونسل کے چیئرمین کو یقین دلایا کہ ترسپون، سلس کوٹ اور گنڈ مغل پور کو بھی کلسٹر ولیجز کی فہرست میں شامل کیا جائے گا۔اس سے قبل ظفر اقبال منہاس، پردیپ شرما، خورشید عالم، وبودھ گپتا، فردوس احمد ٹاک، جی ایل رینہ اور سجاد احمد کچلو نے بحث میں حصہ لے کر ریاست کی قبائلی آبادی کی ترقی کو یقینی بنانے کے لئے اپنی آراءپیش کیں۔