تالاب کھٹیکاں جامع مسجد میں یک روزہ عظیم الشان سیر ت النبی ؐکانفرنس غلطیوں، غفلتوں، کوتاہی اور آپسی نااتفاقی سے باطل طاقتیں امت مسلمہ پر غالب:کلیم صدیقی

اڑان نیوز
جموں// آج کے پر آشوب دور میں ضرورت اس بات کی ہے ہم اپنی صفوں میں اتحاد پیدا کریں اورقرآن اور سنت رسول کے مطابق اپنی زندگی گذاریں۔ آج ملکی، عالمی سطح پر امت مسلمہ کو جن چیلنجوں کا سامنا ہے، اس کی بڑی وجہ دین سے دوری ہے۔ ہماری غلطیوں ، غفلتوں ، کوتاہیوں، آپسی نااتفاقی سے آج باطل طاقتیں امت مسلمہ پر غالب ہورہی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار داعی اسلام حضرت مولانا علامہ کلیم صدیقی نے مرکزی جامع مسجد تالاب کھٹیکاں میں منعقدہ یک روزہ عظیم الشان سیرت النبی ؐکانفرنس سے خطاب کے دوران کیا۔ عالمی سطح پر مسلمانوں کے خلاف ہورہی سازشیں ہمیں بار بار اس بات کی دعوت دے رہی ہیں کہ ہم دین کی رسی کو مضبوطی سے پکڑیں۔ اپنے اعمال، کردار کو بہتر کریں۔ اگر ایسا نہ کیاگیاتو ہمیں آنے والی تباہی سے کوئی بچانہ سکے گا۔جامع مسجد تالاب کھٹیکاں کے امام وخطیب مفتی عنایت اللہ قاسمی کی زیر نگرانی ہوئی یک روزہ عظیم الشان سیرت البنی ؐکانفرنس کا اہتمام کیاگیا۔ اس میں سینکڑوںکی تعداد میںفرزندان توحید نے شرکت کر کے علماء کے بیان سے اپنا ایمان تازہ کیا۔ اس پرنور مجلس کا آغاز صبح دس بجے ہوا۔ تین نشستوں پر مشتمل اس تقریب میں پہلی نشست صبض دس بجے تا ایک بجے۔ دوسری نشست ڈھائی بجے تا نماز عصر اور تیسری نشست مغرب سے عشا تک ہوئی۔ اس میں پروفیسر مفتی عبدالغنی، مولانا غلام نبی القاسمی استاد حدیث وقف دار العلوم دیوبند اور داعی اسلام حضرت مولانا علامہ کلیم صدیقی مہمانان خصوصی اور مقررین خاص تھے۔ کانفرنس کا آغاز تلاوتِ کلام پاک سے ہوا جس کو پڑھنے کی سعاد ت قاری طارق نے حاصل کی۔ اس بعد مدرسہ تعلیم القرآن کے طالبعلم نے انتہائی مترنم آواز میں نعت رسول مقبول پیش کی۔کانفرنس کا باقاعدہ آغاز تلاوت کلام پاک اور آقا دو جہاں صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی بارگاہ میں گلہائے عقیدت پیش کرنے سے ہوا۔ محفل نعت کے بعد مہمان مقررین نے خطابات کرتے ہوئے سیرت النبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو عملی زندگی میں اپنانے کی ضرورت پر زور دیا۔علماء نے ہاکہ حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سیرت سراسر رحمت، محبت اور احترام انسانیت ہے۔ جس سوچ اور فکر میں لوگوں کے گلے کٹیں، گولیاں چلیں اور انسانوں کا خون بہے تو وہ اسلام نہیں بلکہ کفر سے بھی بدتر نظام ہے۔ علماء نے حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی تعلیمات امن و محبت اور رحمت و شفقت کو متعدد احادیث مبارکہ کی روشنی میں بیان کرتے ہوئے پیغام دیا کہ غصہ کی آگ نفرتیں پیدا کرتی ہے، جس سے بندہ درندہ بن جاتا ہے۔ دوسرے کی عزتیں اور مال لوٹتا ہے۔ لوگو! غصہ ختم کرو اور ایک دوسرے کے لیے محبت پھیلائو۔ محبت میں ہی انسانیت ہے۔ کانفرنس میں شرکت کرنے والوں کے لئے کھانے پینے کا بھی معقول انتظام کیاگیاتھا۔اس دوران کئی اسٹائل قائم کئے گئے تھے۔ تالاب کھٹیکاں میں انتہائی غیر معمولی چہل پہل دیکھی گئی۔ پولیس وسول انتظامیہ نے بھی کانفرنس کو کامیاب بنانے میں ہرممکن تعاون دیا۔