اننت ناگ راجوری پارلیمانی حلقہ میں ریکارڈ توڑ ووٹنگ 

SYDNEY, AUSTRALIA - MAY 24: Indian Prime Minister Narendra Modi speaks at a joint news conference with Australian Prime Minister Anthony Albanese (R) at Admiralty House on May 24, 2023 in Sydney, Australia. Modi is visiting Australia on the heels of his and Albanese's participation in the G7 summit in Japan. (Photo by Saeed Khan-Pool/Getty Images)

 

عوام کی پرجوش شرکت ان کے جمہوری جذبے کا ایک متحرک ثبوت :وزیر اعظم

اُڑان نیوز

نئی دہلی //جموں کشمیر لوک سبھا انتخابات کے دوران اننت ناگ راجوری پارلیمانی حلقہ میں ہوئی ریکارڈ توڑ ووٹنگ پر عوام کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ عوام کی پرجوش شرکت ان کے جمہوری جذبے کا ایک متحرک ثبوت ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے جموں کشمیر کے اننت ناگ راجوری لوک سبھا حلقہ میں رائے دہندگان کو مبارکباد دی، کیونکہ اس سال کے عام انتخابات میں گزشتہ 35 سالوں میں سب سے زیادہ ووٹ ڈالے گئے ہیں۔وزیر اعظم نے ایکس پر پوسٹ کیا ’’ اننت ناگ راجوری کے میری بہنوں اور بھائیوں کو لوک سبھا انتخابات میں ریکارڈ ٹرن آؤٹ کیلئے بہت خاص مبارکباد۔ ان کی پرجوش شرکت ان کے جمہوری جذبے کا ایک متحرک ثبوت ہے‘‘۔ الیکشن کمیشن کے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق ہفتہ کو اس حلقے میں 54.3 فیصد ووٹ ڈالے گئے۔ 2019 کے لوک سبھا انتخابات میں اس حلقے میں ووٹ ڈالنے کی شرح 14.3 فیصد تھی۔اس سال کے انتخابات میں، وادی کے دیگر دو پارلیمانی حلقوں سرینگر (38.49 فیصد)، بارہمولہ (59.1 فیصد) میں بھی ووٹر ٹرن آؤٹ ریکارڈ کیا گیا ہے جو کئی دہائیوں میں سب سے زیادہ ہے۔گزشتہ دنوں الیکشن کمیشن راجیو کمار اور نے کہا’’جموں اور کشمیر کے لوگوں نے، اننت ناگ راجوری پی سی پولنگ میں بھی، جمہوریت میں اعتماد ظاہر کیا ہے اور جھوٹ بولنے والوں کو غلط ثابت کیا ہے‘‘۔کمیشن نے دہلی، جموں اور اودھم پور کے مختلف ریلیف کیمپوں میں مقیم کشمیری تارکین وطن ووٹروں کو مخصوص خصوصی پولنگ اسٹیشنوں پر ذاتی طور پر ووٹ ڈالنے یا پوسٹل بیلٹ کا استعمال کرنے کا اختیار بھی دیا۔ جموں میں 21، ادھم پور میں 1 اور دہلی میں 4 خصوصی پولنگ اسٹیشن قائم کیے گئے۔