جموں میں اغوا کے بعد نوجوان کا قتل، ملزم گرفتار :پولیس

جموں//جموں وکشمیر کی سرمائی راجدھانی جموں میں نوجوان کے قتل کیس کو حل کرکے پولیس نے ملزم کو دھر دبوچ کر سلاخوں کے پیچھے دھکیل دیا۔پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ پرلاد سنگھ نامی شخص نے پولیس کنٹرول روم میں شکایت درج کی کہ اس کے انیس سالہ بیٹے راگھو جموال عرف رگھو ساکن ناردانی رائے پورہ بن تالاب کا اغوا کیا گیا ہے۔تحریری شکایت موصول ہونے کے بعد پولیس نے کیس درج کرکے ایک خصوصی ٹیم تشکیل دی۔پولیس نے ہیومن انٹیلی جنس اور ٹیکنیکی صلاحیتوں کو بروئے کا ر لا کر سخت کوشش کے بعد اغوا کاری میں ملوث نوجوان کو درمیانی شب گرفتار کرکے اس کے قبضے سے موبائیل فون برآمد کرکے ضبط کیا۔موصوف ترجمان نے گرفتار نوجوان کی شناخت 23سالہ ستیندر کمار ساکن مین بازار کشتواڑ کے بطور کی۔انہوں نے بتایا کہ ستیندر کمار کی نشاندہی پر جگتی لنک روڈ کے قریب جنگلی علاقے میں نوجوان کی لاش برآمد کی گئی۔پولیس کا کہنا ہے کہ نوجوان نے اپنے جرم کو قبول کرتے ہوئے بتایا کہ اس نے راگھو جموال کے سر پر پتھر سے وار کیا جس کے نتیجے میں اس کی برسر موقع ہی موت واقع ہوئی اور بعد ازاں لاش کو جنگلی علاقے میں ٹھکانے لگایا۔پولیس نے قانونی اور طبی لوازمات پورے کرنے کے بعد میت وارثین کے حوالے کی۔یو