سامنو کولگام میں خون ریز معرکہ آرائی 18گھنٹے کے بعد ختم 5مقامی ملی لشکرٹینٹ جاں بحق ،2رہاشی مکان زمین بھوس

KULGAM, NOV 17 (UNI):- Security Forces advancing towards the encounter site in Kulgam district of Jammu and Kashmir, on Friday. Five militants were killed in a two day operation. UNI PHOTO-76U

راجوری کے گائوں میں فورسز اور ملی ٹینٹوں کے درمیان تصادم میں ملی ٹینٹ ہلاک
سری نگر//جنوبی کشمیر کے ضلع کولگام کے سامنو نامی گائوں میں جمعرات کو شام چار بجے کے قریب شروع ہونے والی کون ریز معرکہ آرائی جمعہ کے روز بعد دو پہر کو اختتام پزیر ہوئی ہے اس تصادم میں آرائی 5مقامی ملی ٹینٹ ہلاک جبکہ 2رہائشی مکان بھی اس تصادم میں زمین بھوس ہوئے ہیں ۔پولیس نے جائے جھڑپ5ملی ٹینٹوں کی لاشوں کے علاوہ بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولی بارود کو ضبط کیا ۔ادھرجموںکے راجوری علاقے میں فورسزاور ملی ٹینٹوں کے درمیان مسلح تصادما آرائی شروع ہوئی ہے جس میںایک ملی ٹینٹ مارا گیا ہے جبکہ تصادم آرائی جاری ہے۔کشمیر نیوز سروس ( کے این ایس ) کے مطابق ۔ جمعرات کی سہ پہرفوج کے34RR اور18بٹالین سی آر پی ایف اور جموںو کشمیرنے ایک مصدقہ اطلاع موصول ہونے کے بعد کولگام کے سامنو گاوں میں2سے3ملی ٹینٹوں سے متعلق اطلاع موصول ہونے کے بعدایک مشترکہ طورپر گاوں کو محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا۔انہوں نے بتایا کہ جوں ہی فورسز اہلکاروںکی پارٹی مشتبہ رہائشی مکان کے نزدیک پہنچے تو وہاں پر موجود دہشت گردوں نے اندھا دھند فائرنگ شروع کی چنانچہ سیکورٹی فورسز نے بھی پوزیشن سنبھال کر جوابی کارروائی کا آغاز کیا جس دوران شدیدگولیوں کا تبادلہ شروع ہوااور ایک انکونٹر شروع ہوا ہے۔انہوں نے مزید بتایا کہ جمعرات شام آٹھ بجے تک سیکورٹی فورسز اور ملی ٹینٹوں کے مابین دوبدو گولیوں کا تبادلہ جاری رہا جس کے بعد فورسز نے پورے علاقے میں چار دائروں والی سیکورٹی تعینات کی تاکہ ملی ٹینٹوں کو فرار ہونے کا کوئی موقع فراہم نہ ہو سکاجبکہ گولی بارود سے یہ پورا علاقہ دہل اٹھا جبکہ رات بھر علاقے میں وقفے وقفے سے فائرنگ ہو رہی تھی جس کے نتیجے میں یہاں لوگ ساری رات تارے گنتے رہے جبکہ علاقے میں مزید کمک کو طلب کیا گیا ہے ۔پولیس ذرائع نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے سامنو اور اس کے متصل متعدد علاقوں کو پوری طرح سے سیل کیا اورلوگوں کے چلنے پھرنے پر بھی پابندی عائد کی۔اس دوران جمعے کی صبح ملی ٹینٹوں اور فورسز کے مابین پھر گولیوں کا تبادلہ شروع ہوا اور بعد ازاں فورسز کی جوابی کارروائی میں پانچ ملی ٹینٹ مارے گئے جن کی شناخت اور تنظیمی وابستگی کے بارے میں پولیس نے بتایا یاسر بلال بٹ ولد بلال احمد بٹ ساکن ونپھوہ،دانش حمید ٹھوکرولد عبد الحمید ٹھوکر،عبید احمد پڈر ولد ولی محمد پڈر ساکنان چکورہ شوپیان،سمیر فاروق شیخ ولد فاروق احمد ساکن چیک کنڈ شوپیان،ہنزال یعقوب شاپ ولد محمد یعقوب شاہ ساکنراول پورہ شوپیان کے طور کی ہے انہوں نے بتایا سبھی ملی ٹینٹ لشکر ٹی آر ایف سے وابستہ تھے۔پولیس نے بتایا مارے گئے ملی ٹینٹ مختلف قسم کے جرایم میں ملوث تھے۔پولیس نے بتایا کہ ان میں ایک غیر ریاستی مزدور پر حملے میں ملوث تھا پولیس نے بتایا مارے گئے ملی ٹینٹوں کے قبضے سے 4اے کے رائفل،4گرنیڈ،2پستول۔ذرائع نے بتایا کہ رہائشی مکان میں محصور ملی ٹینٹوں کو خود سپردگی کرنے کا بھی بھر پور موقع فراہم کیا گیا تاہم دہشت گردوں نے فائرنگ کا سلسلہ جاری رکھا جس کے بعد فورسز نے 2مکانوں کو بارودی مواد سے اڑا دیا۔کشمیر پولیس زون نے بتایا کہ علاقے میں پانچ ملی ٹینٹ مارے گئے ہیں جبکہ انہوں نے بتایا کہ علاقے میں تلاشی آپریشن ہنوز جاری ہے۔ادھرجموں صوبے کے راجوری ضلع کے بہروٹے بدھل علاقے میں جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان تصادم شروع ہوا ہے۔پولیس اور سیکورٹی فورسز نے ایک خاص اطلاع پر علاقے کو گھیرے میں لے کر تلاشی مہم شروع کی۔افسر نے مزید کہا کہ جیسے ہی مشترکہ ٹیم مشتبہ علاقے کے قریب پہنچی، چھپے ہوئے عسکریت پسندوں نے مشترکہ پارٹی پر فائرنگ کردی، جس کے نتیجے میں ایک تصادم شروع ہوگیا۔پولیس نے بتایا کہ ابتدائی طور ایک ملی ٹینٹ مارا گیا ہے۔