’’بھگوان برسا منڈا کی جدوجہد اور قربانیاں بے شمار ہندوستانیوں کو متاثر کرتی ہیں‘‘ : وزیراعظم

کھونٹی // وزیر اعظم نریندر مودی نے جھارکھنڈ کے کھونٹی میں جن جاتیہ گورو دیوس 2023 کی تقریبات کے موقع پر پروگرام سے خطاب کیا پروگرام کے دوران وزیر اعظم نے ’وکسٹ بھارت سنکلپ یاترا‘ اور پردھان منتری خاص طور پر کمزور قبائلی گروپس ڈیولپمنٹ مشن کا آغاز کیا انہوں نے پی ایم کسان اسکیم کی 15ویں قسط بھی جاری کی۔ مسٹر مودی نے جھارکھنڈ میں ریل، سڑک، تعلیم، کوئلہ، پیٹرولیم اور قدرتی گیس جیسے متعدد شعبوں میں 7200 کروڑ روپے کے متعدد ترقیاتی پروجیکٹوں کا سنگ بنیاد بھی رکھا اور قوم کے نام وقف کیا۔ انہوں نے اس موقع پر لگائی گئی نمائش کا واک تھرو بھی کیا۔اس موقع پر صدر جمہوریہ محترمہ دروپدی مرمو کا ایک ویڈیو پیغام بھی چلایا گیا۔وزیر اعظم نے اس موقع پر ’’وکشت بھارت سنکلپ ‘‘ عہد کی قیادت بھی کی۔مسٹر نریندر مودی نے آج اپنے خطاب کے آغاز میں بھگوان برسا منڈا کی جائے پیدائش اولیہاتو گاؤں کے ساتھ ساتھ رانچی میں برسا منڈا میموریل پارک اور فریڈم فائٹر میوزیم کو یاد کیا۔ انہوں نے دو سال قبل اسی دن فریڈم فائٹر میوزیم کا افتتاح کرنے کا بھی ذکر کیا۔ مسٹر مودی نے جن جاتیہ گورو دیوس کے موقع پر ہر شہری کو مبارکباد پیش کی اور نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ انہوں نے جھارکھنڈ کے یوم تاسیس کے موقع پر اپنی مبارکباد بھی پیش کی اور اس کی تشکیل میں سابق وزیر اعظم آنجہانی اٹل بہاری واجپائی کے تعاون پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے جھارکھنڈ کے عوام کو ریل، سڑک، تعلیم، کوئلہ، پیٹرولیم اور قدرتی گیس کے مختلف شعبوں میں آج کے ترقیاتی پروجیکٹوں کے لیے بھی مبارکباد دی۔ انہوں نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ ریاست جھارکھنڈ میں اب بجلی سے چلنے والے 100 فیصد ریل روٹس ہیں۔قبائلی افتخار کے لیے بھگوان برسا منڈا کی متاثر کن جدوجہد کا ذکر کرتے ہوئے وزیر اعظم نے جھارکھنڈ کی سرزمین کے لاتعداد قبائلی ہیروز کے ساتھ تعلق کا ذکر کیا۔ انہوں نے بتایا کہ تلکا مانجھی، سدھو کانہو، چند بھیرو، پھلو جھانو، نیلمبر، پتامبر، جاترا تانا بھگت اور البرٹ ایکا جیسے کئی ہیروز نے اس سرزمین کو سربلند کیا ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ آدیواسی جنگجوؤں نے ملک کے کونے کونے میں آزادی کی جدوجہد میں حصہ لیا۔ انہوں نے مان گڑھ دھام کے گووند گرو، مدھیہ پردیش کے تانتیا بھیل، بھیما نائک، چھتیس گڑھ کے شہید ویر نارائن سنگھ، ویر گنڈادھور، رانی گیڈینلیو کا ذکر کیا۔ منی پور، تلنگانہ کے ویر رام جی گونڈ، آندھرا پردیش کے الوری سیتارام راجو، گونڈ پردیش کی رانی درگاوتی جیسی اہم شخصیات کو نظر انداز کرنے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے وزیر اعظم نے امرت مہوتسو کے دوران ان ہیروز کو یاد کرنے پر اطمینان کا اظہار کیا۔جھارکھنڈ کے ساتھ اپنے ذاتی تعلق پر بات کرتے ہوئے وزیر اعظم نے یاد کیا کہ آیوشمان یوجنا جھارکھنڈ سے شروع کی گئی تھی۔ انہوں نے کہا کہ آج جھارکھنڈ سے دو تاریخی اقدامات کا آغاز کیا جا رہا ہے۔ پہلی بھارت سنکلپ یاترا جو کہ حکومت اور وزیر اعظم جن جاتی آدیواسی نیا مہا ابھیان کے سنترپتی اہداف کا ایک ذریعہ ہوگی جو معدومیت کے دہانے پر موجود قبائل کی حفاظت کرے گی اور ان کی پرورش کرے گی۔مسٹر مودی نے چار ‘وکشٹ بھارت کے امرت اسٹمب’ یا ترقی یافتہ ہندوستان کے ستونوں پر توجہ مرکوز کرنے کی ضرورت پر زور دیا یعنی خواتین کی طاقت یا ناری شکتی، ہندوستان کے فوڈ پروڈیوسرز، ملک کے نوجوان اور آخر میں ہندوستان کے نو متوسط طبقے اور غریبوں پر خصوصی توجہ دینے کی وکالت کی۔ . انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں ترقی کی ڈگری ترقی کے ان ستونوں کو مضبوط کرنے کی ہماری صلاحیت پر منحصر ہے۔ پی ایم مودی نے موجودہ حکومت کے گزشتہ 9 برسوں میں چار ستونوں کو مضبوط کرنے کے لیے کی گئی محنت اور کام پر اطمینان کا اظہار کیا۔وزیر اعظم مودی نے 13 کروڑ سے زیادہ لوگوں کو غریبی سے نکالنے میں حکومت کی اہم کامیابی کو اجاگر کیا۔