منی لونڈرنگ کیس میں ماحولیات جنگلات کے سابق وزیر کی انفورس منٹ ڈائریکٹوریٹ نے گرفتاری عمل میں لائی

الزامات بے بنیاد سابق وزیر کے خلاف ٹھوس اور مضبوط ثبوت موجود ہے /ایڈوکیٹ جنرل
جموں//منی لونڈرنگ کے سلسلے میںانفورس منٹ ڈائریکٹوریٹ کی ٹیم نے ماحولیات و جنگلات کے سابق وزیر کی انٹری سپٹری ضمانت عدالت کی جانب سے رد ہونے کے بعد گرفتاری عمل میںلائی تاہم اہلیہ اور بیٹی کی ضمانتی مدت تیس نومبر تک بڑھادی گئی ہے۔ عدالت نے سابق وزیر کو پوچھ تاچھ کے لئے سات دنوں کی پولیس ریمانڈ منظور کرلی ۔ڈوگرہ سوبیھمان کے لیڈروں کارکنوں کے پی ڈی کارروائی کے خلا ف اپنی ناراضگی ظاہر کی تاہم ایڈوکیٹ جنرل نے گرفتاری کو قا نونی قرار دیتے ہوئے کہا سابق وزیرکے بارے میں ٹھوس اور پختہ ثبوت واضح ہے جس کی بناء پران کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ۔اے پی آئی نیوز کے مطابق انفورس منٹ ڈائریکٹریٹ نے ماحولیات و جنگلات کے سابق وزیر اور سوبھیمان دوگرہ پارٹی کے سربراہ چودھری لال سنگھ کی منی لونڈرنگ کیس میں گرفتاری عمل میںلائی ۔سابق وزیر کو عدالت نے قبل از وقت ضمانت فراہم کی تھی جس کی میعاد ساتھ نومبر کوختم ہوگئی اگرچہ سابق وزیر نے دوبارہ انٹری سپٹری بیل حاصل کرنے کی کوشش کی تاہم عدالت نے ان کی ضمانت مسترد کرتے ہوئے ان کی گرفتاری کے لئے راہ ہموا رکرلی اورا نفورس منٹ کی ٹیم نے سابق وزیر کو سات نومبر رات آٹھ بجے کے قریب اپنے ایک ٹھیکے دار دوست کے گھر سے حراست میں لے لیاجب وہ وہاں بیٹھے تھے ۔سابق وزیرکوطبیعت ناساز ہونے کے بعد جی ایم سی جموں میں داخل کیاگیا جہاں ڈاکٹروں نے ان کامعائنہ کیاتاہم انفورس منٹ ونگ کی جانب سے سابق وزیر کو عدالت میں بھی پیش کیاگیا جہاں ان کی ریمانڈ کے لئے درخواست دائر کی گئی ۔عدالت نے سابق جنگلات و ماحولیات کے وزیر کی اہلیہ اور ان کی بیٹے کی ضمانت کی میعاد تیس نومبر تک بڑھادی جنگلات و ماحولیات کے سابق وزیر پرالزام ہے کہ انہوںنے تین گفٹ ڈیڈوں کے تحت اپنے اہلیہ کے نام بی آر ایجوکیشن ٹرسٹ ادارے کے لئے 329کنال سرکاری اراضی فراہم کرنے کے لئے اپنے عہدے کاناجائز استعمال کیاجب کہ منی لونڈرنگ کے تحت رقومات کابھی لین دین ہوا ہے۔ ای ڈی کے مطابق سابق جنگلات کے وزیرکے گھرپر چھاپے کے دوران دستاویزات بھی اہم نوعیت دستاویزات تحویل میں لئے گئے ڈائریکٹوریٹ کے لیڈروں کی جانب سے ناراضگی کابھی اظہار کیاگیا ۔سیاسی انتقام گیری سے تعبیرکیا گیا ۔ایڈوکیٹ جنرل نے سوبھیمان کے لیڈروں کے دلائل کو مسترد کرتے ہوئے کہاکہ سابق جنگلات ماحولیات کے وزیر کے خلاف ٹھوس بنیادوں پرمبنی ثبوت دستیاب ہے آج ان کی بناء پران کی گرفتاری عمل میں لائی گئی اور کسی بھی طرح کی قانونی خلاف ورزی عمل میں لائی ۔