حالیہ ٹارگیٹ کلنگ میں ملوث افراد کا پتہ دینے والوں کو 10لاکھ روپے کا انعام دیا جائیگا

سرینگر؍؍حالیہ ٹارگیٹ کلنگ میں ملوث افراد کا پتہ دینے والوں 10لاکھ روپے کا انعام دینے کا اعلان کرتے ہوئے نو منتخب پولیس سربراہ آر آر سوئن نے کہا کہ ہلاکتوں میں ملوث افراد کو کسی بھی صورتحال میں بخشا نہیں جائے گا ۔ انہوں نے واضح کر دیا کہ جو بھی ملی ٹنٹ سرگرمیوں میں ملوث پائیں جائے گی ان کے خلاف قانون کے تحت کڑی کارروئی ہو گی ۔سٹار نیوز نیٹ ورک کے مطابق ایک قومی خبر رساں ایجنسی کے ساتھ خصوصی بات چیت کے دوران جموں کشمیر پولیس سربراہ آر آر سوئن نے کہا کہ حالیہ ہلاکتوں جن میں پٹن میں پولیس اہلکار اور پلوامہ میں غیر ریاستی مزدور کے ساتھ ساتھ نوہٹہ سرینگر پولیس انسپکٹر پر حملہ کرنے میں ملوث افراد کی جو نشاندہی کرکے ان کا پتہ دیں گا ان کو 10لاکھ روپے کا انعام دیا جائے گا ۔ انہوں نے واضح کیا کہ ان واقعات میںملوث افراد کو کسی بھی صورتحال میں بخشا نہیں جائے گا ۔ پولیس سربراہ آر آر سوئن نے کہا کہ ہم تینوں کیسوں کو حل کرنے کے قریب ہے اور کچھ اہم سراغ بھی ہاتھ لگے ہیں لہذا جس کسی نے بھی یہ کام انجام دیا ہوگا ان کو کیفر کردار تک پہنچا جائے گا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ میں واضح کر دینا چاہتا ہوں کہ جموں کشمیر میں ملی ٹنٹ سرگرمیوں میںملوث یا انہیں مدد کرنے والوں کیخلاف قانون سختی سے نمٹنے گا ۔ انہوں نے کہا ’’ کوئی بھی جس نے ملی ٹنٹوں کی مدد چاہے انہیں جگہ فراہم کرکے ، موبائیل فون کے ذریعے یا دیگر کسی طریقہ سے کی گئی تو ان کے خلاف قانون کے تحت کڑی سے کڑی کارروائی ہو گی ۔ آر آر سوئن نے کہا کہ جموں کشمیر پولیس دیگر سیکورٹی ایجنسیوں کے ساتھ مل کر امن قائم کرنے میں مصروف عمل ہے اور زمینی سطح پر اس کے مثبت نتائج ہمارے سامنے ہیں تاہم کچھ عناصر امن میں خلل ڈالنے کی کوششیں کر رہے ہیں جو برداشت نہیں کیا جا سکتی ہے اور ایسے عناصر کے خلاف کارروائی لازمی بنتی ہے ۔ پولیس سربراہ نے مزید کہا کہ پولیس جموں کشمیر میں حالات ٹھیک کرنے میں محو ہے اور جموں کشمیر میں مکمل امن کے قیام تک کارروائی جاری رہے گی ۔