سائبر سیکورٹی کے لیے مینوفیکچرنگ میں خود انحصاری ضروری:وزیراعظم مودی

SYDNEY, AUSTRALIA - MAY 24: Indian Prime Minister Narendra Modi speaks at a joint news conference with Australian Prime Minister Anthony Albanese (R) at Admiralty House on May 24, 2023 in Sydney, Australia. Modi is visiting Australia on the heels of his and Albanese's participation in the G7 summit in Japan. (Photo by Saeed Khan-Pool/Getty Images)

نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعہ کو سائبر سیکورٹی کے لئے سازوسامان کی تیاری میں خود انحصاری کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کی نوجوان نسل تکنیکی انقلاب کی قیادت کر رہی ہے اور ملک 6 جی ٹیلی کام ٹیکنالوجی کے میدان میں لیڈر بننے کے لیے پرعزم ہے۔مسٹر مودی یہاں بھارت منڈپم میں انڈیا موبائل کانگریس (آئی ایم سی 2023) کا افتتاح کر رہے تھے۔ اس موقع پر انہوں نے ملک کی 100 یونیورسٹیوں اور اعلیٰ تعلیمی اداروں میں 5G ایپ ڈویلپمنٹ لیبارٹریز کے افتتاح کا بھی اعلان کیا۔ پرگتی میدان کے بھارت منڈپم میں منعقد ہونے والی اس سہ روزہ کانفرنس میں ٹیلی کمیونیکیشن، ڈیجیٹل ٹیکنالوجی اور سافٹ ویئر انڈسٹری کی کمپنیاں حصہ لے رہی ہیں۔ افتتاحی تقریب میں ٹیلی کام سیکٹر کے سرکردہ کاروباریوں نے ڈیجیٹل ٹکنالوجی اور میک ان انڈیا کے مسٹر مودی کے وڑن کی بہت تعریف کی۔مسٹر مودی نے کہا کہ ان کی حکومت چاہتی ہے کہ ہندوستان میں ترقی اور وسائل کے فوائد تمام لوگوں اور تمام خطوں تک پہنچیں اور ہر ایک کو باوقار زندگی گزارنے کا موقع ملے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی نظر میں یہ سب سے بڑا سماجی انصاف ہے۔انٹرنیٹ ٹکنالوجی پر بڑھتے ہوئے انحصار کے موجودہ دور میں سائبر سیکیورٹی اور بنیادی ڈھانچے کی حفاظت کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے مسٹر مودی نے جمعہ کو کہا کہ سائبر سیکیورٹی کو یقینی بنانے کے لیے نیٹ ورک آلات کے معاملے میں خود انحصاری بہت ضروری ہے۔ وزیراعظم نے اس کانفرنس میں ابھرتی ہوئی ٹیکنالوجی کی نمائش بھی دیکھی۔ انہوں نے دہلی اور آس پاس کے علاقوں کے نوجوانوں سے نمائش میں آنے اور مستقبل کی ٹیکنالوجی کی سمت کو دیکھنے اور اس سے تحریک لینے کی اپیل کی۔سائبر سیکورٹی کی اہمیت کے بارے میں انہوں نے کہا، “آپ سب جانتے ہیں کہ سائبر سیکورٹی اور انفراسٹرکچر کی سائبر سیکورٹی کتنی اہم ہے۔ حال ہی میں منعقدہ جی-20 سربراہی اجلاس میں اس موضوع پر خصوصی طور پر بحث کی گئی اور کہا گیا کہ جمہوری معاشرے کو پریشانی پیدا کرنے والوں سے محفوظ رکھنے کے لیے سائبر سیکیورٹی کے شعبے میں تعاون ضروری ہے۔مسٹر مودی نے کہا کہ مینوفیکچرنگ چین میں خود انحصاری کو خاص اہمیت حاصل ہے، جب یہ سامان ملک کی حدود میں بنایا جائے گا تو خطرہ کم ہوگا۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان 2014 کے بعد ٹیکنالوجی اور مینوفیکچرنگ کے میدان میں نئی ??جہتیں طے کر رہا ہے۔انھوں نے کہا کہ ہم ہندوستان میں نہ صرف 5جی کو تیزی سے پھیلا رہے ہیں بلکہ 6جی کے میدان میں بھی لیڈر بننے کی طرف بڑھ رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ 21ویں صدی کا یہ دور ہندوستان کی سوچی سمجھی قیادت (نئی سوچ کے حامل افراد) کا دور ہے۔ہم کچھ شعبوں میں تھاٹ لیڈر بنے ہیں، جیسے یو پی آئی ہماری تھاٹ لیڈرشپ کی نئی سوچ کا نتیجہ ہے، ملک آج ڈیجیٹل ادائیگی کے نظام میں پوری دنیا کی قیادت کر رہا ہے، اسی طرح کوون وبائی مرض کے وقت ویکسینیشن کے لیے کو ون ہماری قیادت کا نتیجہ تھا۔مسٹر مودی نے کہا کہ 2014 کوئی تاریخ نہیں بلکہ ہندوستان میں تبدیلی کی علامت ہے، خیال ر ہے کہ 2014 کے عام انتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی قیادت میں قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) کی حکومت برسراقتدار آئی تھی۔ مسٹر مودی نے کہا کہ ہندوستان نہ صرف ملک میں 5جی نیٹ ورک کو بڑھا رہا ہے بلکہ 6جی میں لیڈر بننے پر بھی زور دے رہا ہے۔ 2جی کے دوران ہونے والے گھپلہ کی طرف اشارہ کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ موجودہ حکومت کے دور میں شروع کیے گئے 4جی نیٹ ورک کی ترقی مکمل طور پر شفاف طریقے سے کی گئی ہے۔انہوں نے یقین ظاہر کیا کہ ہندوستان 6جی ٹیکنالوجی کے ساتھ ایک اہم کردار ادا کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے دور میں 4جی میں تیزی سے توسیع ہوئی اور ہم پر کوئی دھبہ نہیں لگا۔ وزیر اعظم پچھلی متحدہ ترقی پسند اتحاد (یو پی اے) حکومت کے دوران مبینہ 2 جی گھپلہ کا حوالہ دے رہے تھے۔افتتاحی اجلاس میں مواصلات کے وزیر اشونی ویشنو، مواصلات کے وزیر مملکت دیوسنگھ چوہان، ریلائنس جیو انفو کام لمیٹڈ کے چیئرمین آکاش ایم امبانی، بھارتی انٹرپرائزز کے چیئرمین سنیل بھارتی متل، آدتیہ برلا گروپ کے چیئرمین کمار منگلم برلا اور دیگر معززین نے شرکت کی۔مسٹر مودی نے کہا کہ ہندوستان نہ صرف ملک میں 5جی نیٹ ورک کو بڑھا رہا ہے بلکہ 6جی میں لیڈر بننے کے لیے بھی پرعزم ہے اور ‘ہم ہر شعبے میں جمہوریت کی طاقت پر یقین رکھتے ہیں۔’پورے ملک کے تعلیمی اداروں کو 100 ‘فائیو جی یوز کیس لیبز’ کا تحفہ دیتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ یہ لیبز ہمارے نوجوانوں کو ٹیکنالوجی اور ٹیکنالوجی پر مبنی حل کے میدان میں اپنے خوابوں کو شرمندہ تعبیر کرنے کا ایک بہت بڑا موقع فراہم کریں گی۔وزیراعظم نے ہال 5 میں نمائش کا افتتاح اور دورہ بھی کیا۔انہوں نے کہا کہ سیمی کنڈکٹر کی ترقی کے لئے 80 ہزار کروڑ روپے کی پی ایل آئی اسکیم چل رہی ہے۔ آج پوری دنیا میں سیمی کنڈکٹر کمپنیاں ہندوستانی کمپنیوں کے ساتھ مل کر سیمی کنڈکٹر فیبریکیشن اور جانچ کی سہولیات میں سرمایہ کاری کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کا سیمی کنڈکٹر مشن نہ صرف اپنی گھریلو مانگ بلکہ دنیا کی ضروریات کو پورا کرنے کے وڑن کے ساتھ آگے بڑھ رہا ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ ہندوستان میں نوجوان آبادی اور متحرک جمہوریت کی طاقت ہے۔ انہوں نے انڈیا موبائل کانگریس کے ممبران بالخصوص نوجوانوں سے درخواست کی کہ وہ اس سمت میں آگے بڑھیں۔یو این آئی