روزگار پیدا کرنا نئی بلندیوں پر، ہنرمندی کی ترقی سے نوجوانوں کو عالمی مواقع ملے: وزیر اعظم مودی

نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعرات کو کہا کہ ہندوستان میں روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے کا عمل اس وقت نئی بلندیوں کو چھو رہا ہے اور بے روزگاری کی شرح چھ برسوں میں سب سے کم سطح پر ہے۔ مسٹر مودی نے کہا کہ حکومت ملک میں ہنرمندی کی ترقی کو بڑھا کر عالمی سطح پر ہمارے نوجوانوں کے لیے مواقع بڑھانے میں مصروف ہے۔وزیر اعظم نے کہا، “جیسے جیسے ہندوستان کی معیشت پھیل رہی ہے، آپ جیسے نوجوانوں کے لیے نئے امکانات پیدا ہو رہے ہیں۔ ایک حالیہ سروے سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ ہندوستان میں روزگار کی تخلیق ایک نئی بلندی پر پہنچ گئی ہے۔ “ہندوستان میں بے روزگاری کی شرح چھ برسوں میں اپنی کم ترین سطح پر ہے۔” مسٹر مودی ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے کوشل کانووکیشن تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔انہوں نے کہا کہ ملک کے دیہی اور شہری دونوں علاقوں میں بے روزگاری تیزی سے کم ہو رہی ہے۔ جس کا مطلب ہے کہ ترقی کے ثمرات گاؤں اور شہروں دونوں تک یکساں طور پر پہنچ رہے ہیں۔ دونوں جگہوں پر نئے مواقع بھی یکساں طور پر بڑھ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سروے سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ ہندوستان کی مزدور آبادی میں خواتین کی شرکت میں غیر معمولی اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے اسے خواتین کو بااختیار بنانے کی اسکیموں اور مہموں کا اثر بتایا ہے۔ہنرمندی کی ترقی کی وزارت کے زیراہتمام منعقدہ یہ پروگرام ہنر مندی کی ترقی سے متعلق اداروں کی مشترکہ تقریب تھی۔ مسٹر مودی نے اسے ایک قابل ستائش اقدام قرار دیا اور کہا کہ یہ آج کے ہندوستان کی ترجیحات کی بھی عکاسی کرتا ہے۔ انہوں نے اس تقریب میں شرکت کرنے والے پورے ملک کے نوجوانوں کو نیک تمنائیں دیں۔بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کا حوالہ دیتے ہوئے مسٹر مودی نے کہا کہ ہندوستان آنے والے برسوں میں دنیا کی سب سے تیزی سے ترقی کرنے والی معیشت بنا رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ پورا بھروسہ ہے کہ ہندوستان اگلے تین چار برسوں میں دنیا کی سب سے بڑی تین معیشتوں میں شامل ہو جائے گا۔ جس کی وجہ سے آپ (نوجوانوں) کے لیے نئے مواقع پیدا ہوں گے، آپ کو روزگار اور خود کے روزگار کے زیادہ مواقع ملیں گے۔وزیراعظم مودی نے کہا کہ ملک کے قدرتی وسائل اور صلاحیت کو بروئے کار لانے کے لیے جس اہم قوت کی ضرورت ہوتی ہے وہ نوجوان قوت ہے اور یہ یوتھ پاور جتنی مضبوط ہوتی ہے اتنا ہی ملک ترقی کرے گا اور ملکی وسائل کے ساتھ اتنا ہی انصاف ہوتا ہے۔انہوں نے کہا کہ آج ہندوستان اپنے نوجوانوں کو اس سوچ سے بااختیار بنا رہا ہے اور پورے ماحولیاتی نظام میں بے مثال بہتری لا رہا ہے اور اس میں بھی ملک کا نقطہ نظر دو رخی ہے۔ ہم اپنے نوجوانوں کو ہنر اور تعلیم کے ذریعے نئے مواقع سے فائدہ اٹھانے کے لیے تیار کر رہے ہیں اور حکومت تقریباً چار دہائیوں کے بعد نئی تعلیمی پالیسی لے کر آئی ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ حکومت کام کی فراہمی اور روایتی شعبوں کو فروغ دے رہی ہے۔ آج ہندوستان مختلف صنعتوں میں برآمدات اور مینوفیکچرنگ میں نئے ریکارڈ بنا رہا ہے۔ اس کے علاوہ ہندوستان آپ جیسے نوجوانوں کے لیے خلائی، اسٹارٹ اپ، ڈرون، اینی میشن، الیکٹرک گاڑیاں، سیمی کنڈکٹرز وغیرہ جیسے بہت سے شعبوں میں بھی بڑی تعداد میں نئے مواقع پیدا کر رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ آج پوری دنیا مان رہی ہے کہ یہ صدی ہندوستان کی صدی ہونے جا رہی ہے اور اس کے پیچھے بڑی وجہ ہندوستان کی نوجوان آبادی ہے۔ پوری دنیا ہنر مند نوجوانوں کے لیے ہندوستان کی طرف دیکھ رہی ہے۔ حال ہی میں جی20 چوٹی کانفرنس میں گلوبل اسکلز میپنگ سے متعلق ہندوستان کی تجویز کو قبول کیا گیا ہے۔ اس سے آنے والے وقت میں ملک کے نوجوانوں کے لیے بہتر مواقع پیدا ہوں گے۔مسٹر مودی نے کہا کہ پہلے کی حکومتوں میں ہنر مندی کی ترقی پر اتنی توجہ نہیں دی جاتی تھی۔ ہماری حکومت نے اس کے لیے الگ وزارت بنائی اور الگ بجٹ دیا۔ہندوستان میں ہنرمندی کی ترقی کا دائرہ مسلسل بڑھ رہا ہے۔ ہم صرف میکینکس، انجینئرز، ٹیکنالوجی، یا کسی دوسری سروس تک محدود نہیں ہیں۔ اب خواتین سے متعلق سیلف ہیلپ گروپس ہیں۔ اب خواتین کے سیلف ہیلپ گروپس کو ڈرون ٹیکنالوجی کے لیے تیار کیا جا رہا ہے۔ پی ایم وشوکرما یوجنا کے ذریعے ان کی روایتی صلاحیتوں کو جدید ٹیکنالوجی اور آلات سے جوڑا جا رہا ہے۔یو این آئی