ناری شکتی کو بااختیار بنانا جموں و کشمیر انتظامیہ کی اولین ترجیح

جموں و کشمیر کے ترقیاتی سفر میں خواتین کا اہم کردار
ملک کی سالمیت اور خودمختاری کی حفاظت میں سی آر پی ایف کی بے مثال بہادری کو سلام:منوج سنہا
اُڑان نیوز نیٹ ورک

سرینگر //لفٹنٹ گورنر منوج سنہا نے سرینگر کے مشہور لال چوک سے سی آر پی ایف خواتین کی بائیک مہم ’ یشسوینی‘ کو جھنڈی دکھا کر روانہ کیا ۔ یہ مہم 2134 کلو میٹر سے زیادہ کا فاصلہ طے کرتی ہوئی 40 اضلاع کو عبور کرتی ہوئی 31 اکتوبر کو سابق نائب وزیر اعظم ، جدید ہندوستان کو یکجا کرنے والے سردار ولبھ بھائی پٹیل کے یومِ پیدائش پر ایکتا نگر گجرات پہنچے گی ۔ اپنے خطاب میں لفٹنٹ گورنر نے ملک کی سالمیت اور خود مختاری کی حفاظت کرتے ہوئے کئی مشکل حالات میں سی آر پی ایف کے ویرانگنوں کی بے مثال بہادری ، عزم اور ہمت کو سلام پیش کیا ۔ لفٹنٹ گورنر نے کہا کہ یشسوینی سی آر پی ایف کے ویرانگنوں کی خواتین کی بائیک مہم ناری شکتی کی لچک اور طاقت کی علامت ہے ۔انہوں نے کہا کہ یہ خواتین کی طاقت ، ان کے خود اعتمادی کی قربانی کی بھی نمائندگی کرتا ہے اور آج وہ مختلف شعبوں میں ہمت ، عزم اور لگن کے ساتھ کئی سنگ میل حاصل کر رہی ہیں ۔ لفٹنٹ گورنر نے خواتین کی زیر قیادت ترقی کو فروغ دینے اور جموں و کشمیر کی ترقی کے سفر کی قیادت کرنے کیلئے خواتین کو بااختیار بنانے کی حکومت کی کوششوں کا اشتراک کیا ۔ لفٹنٹ گورنر نے کہا ’’ ناری شکتی کو بااختیار بنانا اور مکمل حقوق جموں و کشمیر انتظامیہ کا عزم اور اولین ترجیح ہے ۔ ہماری بیٹیاں تعلیمی ، تحقیق ، اختراعات اور کاروباری شعبے میں ایک پُر امید معاشرے کے خوابوں کو پورا کرنے کیلئے کامیابیاں سمیٹ رہی ہیں ۔ ‘‘ انہوں نے کہا کہ ناری شکتی جموں و کشمیر یو ٹی کے ترقیاتی سفر میں ایک اہم کردار ادا کر رہی ہے اور وہ وکست بھارت کیلئے بھی بہت زیادہ تعاون کر رہی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ ناری شکتی ہے جو مستقبل میں انسانی وقار اور سماجی مساوات کو یقینی بنائے گی ۔ لفٹنٹ گورنر نے بائیک مہم میں حصہ لینے والے تمام ویرانگنوں کو اپنی نیک خواہشات کا اظہار کیا ۔ کراس کنٹری بائیک مہم ملک کی خواتین کی طاقت کا جشن منانے کیلئے سی آر پی ایف اور خواتین اور بچوں کی ترقی کی وزارت کی مشترکہ کوششیں ہیں ۔ سفر کے دوران سرینگر ، شیلانگ اور کنیا کماری کی تینوں ٹیمیں ’’ بیٹی بچاؤ بیٹی پڑھاؤ ‘‘ ( بی بی بی پی ) کے ٹارگٹ گروپس جیسے اسکولی بچوں اور کالج کی لڑکیوں ، خواتین کے سیلف ہیلپ گروپس ، این سی سی کے کیڈٹس ، سی سی آئی کے بچوں، این وائی کے ایس ممبران ، نوعمر لڑکیاں اور لڑکے ، آنگن واڑی کارکنان وغیرہ کے ساتھ بات چیت کریں گی ۔ اس موقع پر لفٹنٹ گورنر کے مشیر راجیو رائے بھٹناگر ، سپیشل ڈی جی کرائم ، اے ڈی جی سی آر پی ایف جے اینڈ کے زون ، آئی جی سی آر پی ایف ، ڈویژنل کمشنر کشمیر ، سی آر پی ایف ، سول اور پولیس انتظامیہ کے سینئر افسران اور بڑی تعداد میں لوگ موجود تھے ۔