سرمائی راجدھانی جموں میں ایک روزہ کل جماعتی اجلاس منعقد

’اب سڑکوں پر نکلنے کا وقت آگیا‘
عوامی حقوق کی بحالی کیلئے 10اکتوبر کو پر امن احتجاج کریں گے: فاروق عبداللہ
اُڑان نیوز نیٹ ورک

جموں//جموں وکشمیر کی سرمائی راجدھانی جموں میں نیشنل کانفرنس کے صدر فاروق عبداللہ کی سربراہی میں آل پارٹی میٹنگ منعقد ہوئی جس میں یوٹی کی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال ہوا۔فاروق عبداللہ نے کہاکہ میٹنگ کے دوران متفقہ فیصلہ لیا گیا کہ 10اکتوبر کو جموں وکشمیر کی تمام سیاسی جماعتیں حقوق کی بحالی کی خاطر پر امن احتجاج کریں گی۔اطلاعات کے مطابق جموں میں نیشنل کانفرنس کے صدر فاروق عبداللہ کی سربراہی میں منگل کے روز ایک کل جماعتی میٹنگ منعقد ہوئی جس میں بی جے پی اور اپنی پارٹی کو چھوڑ کر سبھی سیاسی جماعتوں کے نمائندوں نے شرکت کی جس دوران کئی اہم فیصلے لئے گئے۔میٹنگ کے بعد نامہ نگاروں سے بات چیت کے دوران ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہاکہ ہم نے متفقہ طورپر فیصلہ لیا ہے کہ جموں وکشمیر کے عوام کے حقوق کی بحالی کی خاطر اب سڑکوں پر نکلنے کا وقت آگیا ہے۔انہوں نے کہاکہ سبھی سیاسی جماعتوں نے دس اکتوبر کو پر امن احتجاج کرنے کا فیصلہ لیا ہے جس میں سبھی پارٹیوں کے نمائندے ایک ہی مقام پر احتجاج کریں گے۔انہوں نے کہاکہ احتجاج کی اجازت کی خاطر صوبائی کمشنر کو خط روانہ کیا جائے گا۔اپنی پارٹی اور پروگریسیو آزاد پارٹی کے نمائندوں کی جانب سے میٹنگ میں شریک نہ ہونے کے بارے میں جب فاروق عبداللہ سے سوال کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ دونوں سرکاری جماعتیں ہیں۔جموں وکشمیر میں الیکشن موخر کرنے کے بارے میں پوچھے گئے اور ایک سوال کے جواب میں فاروق عبداللہ نے کہاکہ دس اکتوبر کے بعد اس حوالے سے لائحہ عمل مرتب کیا جائے گا۔اس موقع پر یوسف تاریگامی نے کہاکہ ہمارے حقوق سلب کئے گئے ہیں ہم نے آئین اور لوگوں کے حقوق کے تحفظ کی خاطر سڑکوں پر نکلنے کا فیصلہ لیا ہے۔ان کے مطابق ہم ملک کے لوگوں کو یہ بتا دینا چاہتے ہیں کہ ہمارے ساتھ کیا ہو رہا ہے۔