جموں وکشمیر کے لوگ آئینی طریقے سے اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے :پروفیسر سوز

اُڑان نیوز

سری نگر//کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر پروفیسر سیف الدین سوز نے منگل کے روز کہاکہ جموں وکشمیر کے عوام اپنی تعمیر و ترقی کے امور کو خوب سمجھتے ہیں۔ ان کو دہلی کے حکمرانوں کی دفعہ 370 کی منسوخی کے سلسلے میں توضیحات کی ضرورت نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیر ریاست کی سر زمین پر رہنے والوں کو اپنا سود اور بہبود معلوم ہے۔ فی الحال جمو ں و کشمیر کے لوگ یہ محسوس کر رہے ہیں کہ دہلی کے حکمرانوں نے آئین ہند کی دفعہ 370 کو یک طرفہ طور ختم کر کے غلطی کا ارتکاب کیا ہے۔ تاہم جموںوکشمیر کے لوگ اس دفعہ کی بحالی کیلئے جمہوری اور آئینی طریقے سے اپنی جدوجہد جاری رکھیںگے۔مسٹر سوز نے مزید بتایا کہ جموں و کشمیر کی مین اسٹریم جماعتوں نے بھی اس بات کا یقین دلایا ہے کہ اسمبلی انتخابات کے بعد نئی اسمبلی میں پہلی قرار داد وہ ہوگی جو منسوخ شدہ دفعہ 370 کی بحالی کیلئے ہوگی۔اس طرح مین اسٹریم جماعتوں کا دعویٰ عوامی توقعات کے مطابق ہے !انہوں نے کہاکہہ مجھے ایسا لگتا ہے کہ مین اسٹریم جماعتیں اپنے دعویٰ کے سلسلے میں سرگرم عمل رہیںگی۔ یہ ایسا دعویٰ ہے کہ جس پر ریاست کے عوام مضبوطی سے ڈٹے ہوئے ہیں!!یواین آئی