یاترا ہمیں جموںوکشمیر کیلئے ایک روشن مستقبل کی تعمیر کیلئے تحریک دیتی ہے

غریب لوگوں کیلئے غذائی تحفظ ہماری بنیادی تہذیبی اقدار
سے محرم لوگوں کو زمین اور پی ایم اے وائی کے تحت مکان فراہم کرنے کی سکیم معیارِ زندگی کو بہتر اور پسماندہ اَفراد کو بااِختیار بنائے گی
نیوزڈیسک
سرینگر//لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا نے ریڈیا ماہانہ پروگرام ’’ عوام کی آواز ‘‘ کا 28قسط کو مقامی لوگوں اور پوتر اَمرناتھ جی یاترا میں مصروف تمام شراکت داروں کے نام وقف کیا۔اُنہوں نے اُن تمام لوگوں کا شکریہ اَدا کیا جو شری اَمرناتھ جی یاتراکو شردھالوئوںکے لئے خوشگوار بنانے کے لئے بے لوث عزم کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا،’’ یہ پوتر یاترا ہمیں جموںوکشمیر کیلئے ایک روشن مستقبل کی تعمیر کیلئے تحریک دیتی ہے جس کی جڑیں اِنسانی وقار ، سماجی مساوات اور اِنصاف پر مشتمل ہیں۔‘‘اُنہوں نے یوٹی اِنتظامیہ کے اہم فیصلوں پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ غریب ، پسماندہ اور محروم اَفراد اِنتظامیہ کی ترجیح ہیں اور ان کی بنیادی ضروریات کو پورا کرنے اور ان کی زندگی میں آسانی کو فروغ دینے کے لئے ہر ممکن کوشش کی جارہی ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا،’’ جموںوکشمیر اِنتظامیہ نے غریبوں اور معاشرے کے کمزور طبقوں کی فلاح و بہبود کے لئے کام کرنے کا عہد کیاہے ۔ زمینوں سے محروم لوگوںکو زمین اور پی ایم اے وائی کے تحت مکان فراہم کرنے کی سکیم معیارِ زندگی کو بہتر اور پسماندہ لوگوں کو بااِختیار بنائے گی۔‘‘اُنہوں نے کہا کہ غریب لوگوں کے لئے غذائی تحفظ ہماری بنیادی تہذیبی اقدار ہیں۔اُنہوں نے مزید کہا کہ ترجیحی گھرانوں کے لئے وزیر اعظم کی فوڈ سپلی منٹیشن سکیم سے معاشرے کے ایک بڑے طبقے کو فائدہ پہنچے گا اور یہ ان کی فلاح و بہبود کو یقینی بنائے گا۔لیفٹیننٹ گورنر نے سماج کے تمام طبقوں پر زور دیا کہ وہ ایسے عناصر کے خلاف چوکس رہیں جو عوام کو گمراہ کررہے ہیں اور غریبوں کے مفاد کے خلاف کر رہے ہیں۔اُنہوں نے کہا،’’ ہمیں جموںوکشمیر یوٹی کے سنہری مستقبل کی تعمیر کے لئے موجودہ تبدیلی کے سفر میں شامل ہونا چاہیے ۔ خوشحال جموںوکشمیر کے لئے نوجوان ہماری اُمید ہیں اورہمیںیک ٹیم کے طور پر کام کرنا چاہیے تاکہ انہیں تمام ضروری مدد فراہم کی جاسکے۔‘‘لیفٹیننٹ گورنر نے اِس مہینے کے ریڈیو پروگرام ’’ عوام کی آواز ‘‘کے آج کی قسط میں جموںوکشمیر کے اِختراعی اور کاروباری نوجوانوں کی متاثر کن کامیابیوں کی داستانیں ساجھہ کیں۔اُنہوں نے جی ایچ ایس ایس کریری بارہمولہ کے طلباء شاکر احمد ، عدنان مشتاق اور فرقان رشید کا خصوصی تذکرہ کیا جنہوں نے ایپل گریڈ تیار کیا ہے اور دوسروں کو اَپنے خوابوں کو پورا کرنے کی ترغیب دے رہے ہیں۔ اُنہوں نے کہا،’’ مجھے فخر محسوس ہوتا ہے جب میں دیکھتا ہوں کہ نوجوان لڑکے اور لڑکیاں جوش و خروش کے ساتھ نئی ایجادات اور اختراعات پر کام کر تے ہیں۔‘‘لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ بعض اوقات نامعلوم اور کوئی نیا راستہ ہمارے ذہن میں خوف پیدا کرتا ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ خوف سے آزاد ہو کرجموںوکشمیر کے نوجوان کامیابی کا راستہ بنار ہے ہیں اور اَنٹرپرینیور شپ سے اَپنی قسمت خود رقم کر رہے ہیں۔ایسے ہی متاثرین میں سے ایک بارہمولہ کی سفینہ مشتاق ہیں جنہوں نے اَپنی تعلیم کے بعد زرعی کاروباری بننے کا فیصلہ کیا۔ اس نے بعد میں مشروم کاشت سے شروع کرتے ہوئے پھولوں کی بیج اور محفوظ کاشت میں تنوع پیدا کیا ۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ اَپنے جوش سے اس نے زرعی کاروبار میں ایک کامیاب کیرئیر بنایا۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہاکہ ریاسی کے سندر کمار جیسے نوجوان ایک کامیاب ایگری پرینر کی روشن مثال ہیں۔ آج اس نے کاروبار کے تین شعبوں مشروم کاشت ، مگس بانی اور ڈیری پالن کو ملا کر ایک دیر پاکاروبار ماڈل تیا ر کیا ہے ۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ جموںوکشمیر کی تیز رفتار ترقی کے پیچھے ایسی طاقت ، عزم اور ہمت ہی اَصل طاقت ہے۔اُنہوں نے کہا کہ ڈپلومیسی لا اینڈر بزنس میں پوسٹ گریجویٹ پیرزادہ مقیم نے ڈیری فارمنگ کے وسیع کاروباری اِمکانات کو اِستعمال کیا ۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ دودھ کی پروسسنگ پلانٹ اور مستقبل کے ایکشن پلان کے ساتھ پیرزادہ مقیم اپنی کامیابی کی داستان رقم کر ر ہے ہیں ۔جموں کی ایک وائس آرٹسٹ شروتی اروڑہ کی تجاویز کا اِشتراک کرنا ، سری نگر کے جی آر آہنگر ، جموں سے راجندر پرساد سمت پوری اور راجیشور سنگھ اور اننت ناگ سے منیب مشتاق نے جموںوکشمیر میں صوتی فن کاروں اور غزل نگاروں کے فروغ ، شہری نظم و نسق میں عوامی شرکت ، سمارٹ سٹی اور کمیونٹی کی شرکت کے حوالے سے لیفٹیننٹ گورنر نے متعلقہ محکموں کو مناسب کارروائی کرنے کی ہدایت دی۔اُنہوں نے جموں کے لویش کمار ، شوپیاں سے مد ثر احمد میر ، سانبہ سے وینا جموال اور جموں کی ٹیکسٹائل آرٹسٹ پریتی شرما سے سمارٹ دیہاتوں میں پنچایتی راج اِداروں کے کردار کو مضبوط بنانے اور جموں وکشمیر میں ٹیکسٹائل آرٹ کو فروغ دینے کے بارے میں موصول ہونے والی معلومات پر بھی بات کی۔اُنہوں نے کہا کہ زائد از41,000 شہری مائی گو جے کے کے پلیٹ فارم میں شامل ہوچکے ہیں اور مختلف موضوعات پر اَپنی رائے کا اِظہار کررہے ہیں۔اُنہوں نے کہا کہ ان آئیڈیا فیڈ بیک پلیٹ فارموں پر زبردست ردِّعمل نے پالیسی سازی میں عوامی شرکت کو تقویت بخشی ہے۔لیفٹیننٹ گورنر نے دھیرج بسمل اور نگہت نسرین کو ڈوگری اور کشمیر زبانوں میں ان کی بھرپور شراکت کے لئے ساہتیہ اکادمی یووا پرسکار 2023ء جیتنے پر اور بلوان سنگھ جمور یہ کو بال ساہتیہ پرسکار جیتنے پر مبارک باد دی۔