بی جے پی نوجوانوں کے مستقبل کی حفاظت کرتی ہے: وزیر اعظم 

یو این آئی

نئی دہلی//وزیر اعظم نریندر مودی نے منگل کو کہا کہ خاندانی نظریہ کی سیاسی جماعتیں بدعنوانی اور اقربا پروری پر چلتی ہیں اور نوجوانوں اور عام لوگوں کے لیے ترقی کے مواقع کے ‘ریٹ کارڈ’ بناتی ہیں جب کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نوجوانوں کے مستقبل کو’سیف گارڈ‘ کرتی ہے۔آج یہاں قومی روزگار میلے میں 70,000 لوگوں کو تقرری کے خطوط تقسیم کرنے کے بعد تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مودی نے کہا، ‘ابھی آپ نے کچھ دن پہلے میڈیا رپورٹس دیکھی ہوں گی، اخبارات اور ٹی وی میں بہت کچھ دیکھا گیا تھا۔ اس میں ایک ریاست کی بات کی جاتی ہے، اور کیا بحث ہوتی ہے، ایک ریاست میں ’نوکری کے بدلے نقدی‘ گھپلے کی جانچ میں جو باتیں سامنے آئی ہیں، اس سے ملک کے نوجوانوں میں کافی تشویش پائی جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس ریاست کا کیا نظام ہے، کیا بات ابھر کر آئی ہے، اگر آپ کو سرکاری نوکری چاہیے تو ہر عہدے کے لیے، جیسے ہوٹل میں کھانا کھانے جائیں تو ریٹ کارڈ ہوتا ہے نا، ہر پوسٹ کے لیے ریٹ کارڈ” ہے اور ریٹ کارڈ بھی کیسا ہے، چھوٹے غریبوں کو لوٹا جا رہا ہے، اگر آپ جھاڑو دینے والے کی نوکری چاہتے ہیں تو اس کے لیے آپ کو یہ ریٹ ادا کرنا پڑے گا، آپ کو اگر آپ ڈرائیور کی نوکری چاہئے تو ڈرائیور کی نوکری کا یہ ریٹ ہوگا، اگر آپ کلرک کی نوکری، ٹیچر کی نوکری، نرس کی نوکری چاہئے تو آپ کا یہ ریٹ رہے گا۔انہوں نے کہا کہ آپ سوچئے کہ اس ریاست میں ہر عہدے کے لیے ‘ریٹ کارڈ’ چلتا ہے اور کٹ منی کا کاروبار چلتا ہے، ملک کے نوجوان کہاں جائیں گے۔ یہ خود غرض سیاسی جماعتیں روزگار کے لیے ‘ریٹ کارڈ’ بناتی ہیں۔بہار کے سابق وزیر اعلیٰ لالو پرساد یادو کا نام لیے بغیر مسٹر مودی نے کہا، ‘‘کچھ دن پہلے ایک اور معاملہ سامنے آیا تھا۔ ریلوے کے ایک وزیر نے غریب کسانوں کو نوکری دینے کے بدلے ان کی زمینیں لکھوا لی تھیں۔ نوکری نظام کے بدلے زمین، وہ بھی کیس سنٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن (سی بی آئی) میں چل رہا ہے، عدالت میں چل رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارے سامنے دو چیزیں ہیں، ایک طرف وہ جماعتیں جو خاندانی ہیں، دوسری طرف وہ جماعتیں جو اقربا پروری کرتی ہیں، یہ جماعتیں جو روزگار کے نام پر ملک کے نوجوانوں کو کرپشن میں لوٹتی ہیں، جاب ریٹ کارڈ، ہر چیز میں ریٹ کارڈ، ہر چیز میں کٹ منی، دلالی۔وزیر اعظم نے کہا، “ان کا راستہ ریٹ کارڈ ہے، جب کہ ہم نوجوانوں کے روشن مستقبل کے تحفظ کے لیے کام کر رہے ہیں۔ ریٹ کارڈ آپ کی صلاحیت، آپ کی قابلیت، آپ کے خوابوں کو چکنا چور کر دیتے ہیں۔ ہم آپ کے محافظ ہیں۔” ہم سیف گارڈ میں مصروف ہیں۔ جو آپ کے خوابوں کے لیے جیتے ہیں۔ ہم آپ کے عزم کو سچ کرنے کے لیے کام کرتے ہیں۔ ہم آپ کی ہر خواہش، ہر توقع، آپ کے خاندان کی ہر خواہش اور امنگوں کی حفاظت میں مصروف ہیں۔ اب ملک طے کرے گا ہمارے ملک کے نوجوانوں کا مستقبل ریٹ کارڈ کے بھروسہ چلے گا کہ وہ سیف گارڈ نظام کے اندر محفوظ طریقے سے چلنا چاہیں گے۔”مسٹر مودی نے کہا، ’’یہ اقربا پروری پارٹیاں ملک کے عام لوگوں سے آگے بڑھنے کے مواقع چھین لیتی ہیں۔ جب کہ ہم ملک کے عام لوگوں کے لیے روزانہ نئے مواقع پیدا کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں کچھ سیاسی جماعتوں نے زبان کو ایک دوسرے لڑانے کے لئے، ملک کو توڑنے کے لئے زبان کو ہتھیار بنایا، لیکن ہم نے لوگوں کو روزگار دینے اور انہیں بااختیار بنانے کے لیے زبان کو لوگوں کو روزگار دینے کا ذریعہ بنایا ہے۔ ہماری حکومت اس بات کو یقینی بنا رہی ہے کہ جو بھی اپنا خواب پورا کرنا چاہتا ہے اس کے سامنے کوئی زبان دیوار نہ بنے۔انہوں نے کہا، ’’مرکزی حکومت جس طرح سے مادری زبان میں بھرتی کے امتحانات پر زور دے رہی ہے، داخلہ کے امتحانات پر زور دے رہی ہے، میرے ملک کے بیٹوں اور بیٹیوں اور ہمارے نوجوان کو اس سے زیادہ سے زیادہ فائدہ مل رہا ہے۔ علاقائی زبانوں میں امتحان دینے سے نوجوانوں کو آسانی سے اپنی صلاحیتوں کو ثابت کرنے کا موقع ملا ہے۔مسٹر مودی نے کہا کہ آج کے تیزی سے آگے بڑھتے ہوئے ہندوستان میں سرکاری نظام اور سرکاری ملازمین کے کام کرنے کا طریقہ بھی تیزی سے بدل رہا ہے۔ ایک وقت تھا جب ملک کے عام شہری سرکاری دفاتر کے چکر لگاتے تھے۔ آج اس کی خدمات لے کر حکومت ملک کے شہریوں کے گھر گھر تک پہنچ رہی ہے۔ اب عوام کی توقعات اور خطے کی ضروریات کو سمجھتے ہوئے ہماری حکومت مسلسل کام کر رہی ہے۔ مختلف سرکاری دفاتر اور محکمے، عوام کے تئیں حساس ہوتے ہوئے کام کرنے پر زور، یہ ہماری ترجیح ہے۔انہوں نے کہا کہ موبائل ایپس کے ذریعے، ڈیجیٹل خدمات کے ذریعے، حکومت کی طرف سے دستیاب سہولیات اب بہت آسان ہو گئی ہیں۔ عوامی شکایات کے نظام کو بھی مسلسل مضبوط کیا جا رہا ہے۔ ان تبدیلیوں کے درمیان آپ کو ملک کے شہریوں کے تئیں بھی پوری حساسیت کے ساتھ کام کرنا ہوگا۔ آپ کو ان اصلاحات کو مزید آگے لے جانا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت میں آنا زندگی کا آخری مقام نہیں ہو سکتا۔ آپ کو اس سے آگے بڑھ کر نئی بلندیوں کو حاصل کرنا ہوگا۔ آپ کی زندگی میں نئے خواب، نئے عزم، نئی صلاحیتیں ابھرکر آنی چاہئیں اور اس کے لیے حکومت نے آن لائن پورٹل کی ایک نئی سہولت بنائی ہے۔ حال ہی میں اس کے صارفین کی تعداد 10 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے۔انہوں نے کہا، “اس آن لائن پورٹل پر دستیاب کورسز سے بھرپور فائدہ اٹھائیں، آپو نوکری میں بہت کارآمد ثابت ہوں گی۔ آپ کے لیے ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی۔ آپ بھی آگے بڑھیں، ملک بھی آگے بڑھے۔” یہ 25 سال میرے لیے آپ کی ترقی کے بھی ہیں اور ہم سب کے لیے ملک کی ترقی کے بھی ہیں۔