شدیدبارشوں نے زمینداروں کی محنت پر پانی پھیر دیا

تحصیل آفسیران کو نقصان کا ازالہ کئے جانے کی ڈی سی کی ہدایت
ذوالفقار علی
ضلع کشتواڑ میں مو سلادھار بارشوں سے لوگوں کو مشکلات کا سامنا کر نا پڑرہا ہے ۔ضلع کشتواڑ میں بیشتر علاقے زیر آب جسکی وجہ سے لوگوںکو زبردست مشکلات کا سامناکر نا پر رہا ہے۔ تفصیلات کے مطابق کشتواڑ کے سبھی دیہات میں بارشوں سے کئی علاقوں میں لوگوں کو طرح طرح کی مشکلاتوں کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے، لگتار بارشوں کا سلسلہ جاری رہنے سے عام زندگی مفلوج ہو کر رہ گئی ہے۔ اگر دیکھ جائے بارشوں سے زیادہ نقصان زمینداروں کو ہو ا ہے جبکہ ضلع ترقایتی کمشنر ڈاکٹر دینشوار یادو نے سبھی تمام تحصیل لیول کے آفسیران سخت کو ہدایت اپنے اپنے علاقوں رہے کے لوگوں کے مشکلات کا ازالہ کرے۔ کشتواڑ میں نل بچھانے اورسیوریج نظام لانے کے نام پر شہرکے اکثرحصوں میں گلیوںکو اکھاڑاگیااور محکمہ میونسپل کونسل کی ادگی پر سوالیہ نشان: میونسپل کونسل کے آفسیران آپنے آپ میں مست کہا جاتا ہے کہ یہ نل بچھانے اور سیوریج نظام لانے کا یہ سارا کام پرائم منسٹر کے تعمیر نو کے اسی پیکچ کا حصہ ہے جس کے لئے ضلع کشتواڑ شہر کی حالت کو سدھارنے کے لئے کروڑ روپے مخصوص کئے گئے تھے ۔اس بڑی رقم کو کس طرح استعمال کیا جارہا ہے ۔کشتواڑ شہر میں پوری طرح بارش ابھی برسی ہی نہیں لیکن نالیوں کی گندگی نکاسی نہ ہونی کی وجہ سے سڑکوں پر گندگی کے دھیر جگہ جگہ لگے ہوئے ہیں جس کی وجہ سے بیماری کا خطرہ بن رہا ہے۔ اس صورتحال سے چل میں عام راہگیروں کو بھی مشکلات کا سامناکرناپڑتا ہے کیوں کہ نالیوں کی یہ گندگی سڑکوں میں داخل ہوکر عوام کے کپڑوں کوبھی ناپاک کرتی ہے لیکن میونسپلٹی ہرجگہ ناکام ہوگئی ہے ۔ذرائع کا کہناہے کہ اس مشکل صور تحال کی ذمہ داری میونسپلٹی کشتواڑ پر عائدہے جونالیوں کی نکاسی کی طرف دھیان نہیں دے رہی ہے ۔ عوام کا سوال ہے کہ آخرمیونسپلٹی کشتواڑ کی نیند کب کھلے گی اور کب لوگوں میں ذمہ داری کا احساس جاگے گا۔