جموں و کشمیر بھارت کا حصہ ہے

The Union Minister for Culture, Tourism and Development of North Eastern Region (DoNER), Shri G. Kishan Reddy addressing at the side event of the 3rd G20 Tourism Working Group meeting on Film Tourism, in Srinagar on May 23, 2023.

قیام امن ہماری اولین ترجیح
حزب اختلاف جماعتوں نے جموں و کشمیر کے لوگوں کی توہین کی، پاکستان کا کوئی حق نہیں: مرکزی وزیر سیاحت
نیوزڈیسک
سرینگر//مرکزی وزیر سیاحت جی کے ریڈی کا کہنا ہے کہ جموں و کشمیر بھارت کا حصہ ہے اور پاکستان کو اس کے متعلق بات کرنے کا کوئی حق نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کو اپنے ملک کی طرف توجہ دینی چاہئے۔موصوف مرکزی وزیر نے ان باتوں کا اظہار منگل کے روز یہاں ایس کے آئی سی سی میں منعقد ہو رہے جی ٹونٹی اجلاس کے حاشیئے پر نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرنے کے دوران کیا۔انہوں نے کہا: ‘پاکستان بحران سے دوچار ہے وہاں لوگوں کو روٹی نہیں ہے روز گار نہیں ہے پاکستان کو اپنے حال پر دھیان دینا چاہئے’۔ان کا کہنا تھا: ‘جو کچھ ہم کر رہے ہیں وہ ہم اپنے لوگوں کی بھلائی کے لئے کر رہے ہیں پاکستان کون ہے جو اس کے بارے میں بات کرے’۔مرکزی وزیر نے کہا کہ جموں وکشمیر کے لوگ خوش ہیں اور مرکزی حکومت ان کے لئے کام کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ جو کچھ جموں وکشمیر کے لوگوں کو چاہئے وہ ان کو فراہم کیا جائے گا۔ان کا کہنا تھا: ‘پاکستان ختم ہوا ہے ان کی باتوں کی طرف توجہ دینے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ہمیں اپنے جموں وکشمیر کے لوگوں کے بارے میں سوچنا ہے’۔سیاحت کے بارے میں مرکزی حکومت کے اقدام کے بارے میں پوچھے جانے پر مسٹر ریڈی نے کہا کہ بھارت ایک ٹورزم اجلاس کا اہتمام کرے گا جس میں مشہور سیاحتی ریاستوں جیسے جموں و کشمیر، ہماچل پردیش اور اترا کھنڈ میں سرمایہ کاری کرنے کے بارے میں تبادلہ خیال کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ نجی سرمایہ کاری ضروری ہے اور اس کے بغیر ہندوستان جیسا بڑا ملک میں ٹورزم کا بڑھنا مشکل ہے۔سری نگر میں جی ٹونٹی اجلاس کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ اس نوعیت کے اجلاس ملک کی تمام ریاستوں کے دارلخلافوں میں منعقد ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ بھارت کی قیادت میں 56 شہروں میں 250 اجلاس کا انعقاد کیا جائے گا۔وزیر سیاحت نے کہا کہ سری نگر جو ایک تاریخی شہر ہے میں یہ اجلاس منعقد کرنے کا فیصلہ لیا گیا تھا تاہم اس کے لئے کچھ احتیاطی اقدام اٹھانے پڑے۔انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر کے لوگ تعمیر و ترقی چاہتے ہیں وہ انفراسٹکرچر چاہتے ہیں اور وہ ملک کے برابر روزگار کے موقع چاہتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ میٹنگ میں جموں و کشمیر کی جی ڈی پی میں سیاحت کی شراکت کو دوگنا کرنے کے لئے اٹھائے جانے والے اقدامات پر غور کیا جائے گا۔مرکزی وزیر نے کہا کہ سال گذشتہ جموں و کشمیر کے جی ڈی پی میں ٹورزم کا 7 فیصد حصہ تھا۔انہوں نے جموں وکشمیر کے لوگوں اور جموں وکشمیر انتظامیہ کا اس اجلاس کو سپورٹ کرنے پر شکریہ ادا کیا۔ان کا کہنا تھا کہ سری نگر نہ صرف ملک بلکہ دنیا کا پہلے درجے کا سیاحتی مقام بن جائے گا۔محبوبہ مفتی کے بیان کہ بی جے پی نے جی ٹونٹی کو ہائی جیک کیا کے بارے میں مسٹر ریڈی نے کہا کہ کشمیر اپوزیشن جماعتیں جموں و کشمیر میں امن نہیں دیکھنا چاہتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ آج جموں وکشمیر میں تعمیر و ترقی کے کام تیزی سے ہو رہے ہیں لہذا میں اپوزیشن جماعتوں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ اس کے لئے ہماری حمایت کریں۔ان کا کہنا تھا کہ جموں و کشمیر کو بھارت سے کوئی الگ نہیں کر سکتا ہے۔موصوف وزیر نے اپوزیشن پارٹیوں پر جموں و کشمیر کے لوگوں کی توہین کرنے کا الزام لگایا۔انہوں نے کہا کہ قیام امن ہماری اولین ترجیح ہے۔