لتہ پورہ خود کش حملہ ،جموں میں احتجاج کے دوران تشد د بھڑک اٹھا کشیدہ حالات کے بعد کرفیو نافذ، فوج طلب درجنوںکشمیر نمبر کی گاڑیوںکی توڑ پھوڑ، نصف درجن نذر آتش، انٹرنیٹ سروس معطل

جموں//لیتہپورہ اونتی پورہ جمعرات کے روز خود کش حملے میں 49مہلوک سی آر پی ایف اہلکاروںکی ہلاکت کے خلاف جموں چیمبر آف کامرس کی کال پر ہڑتال اور احتجاج کے دوران تششد بھڑک اٹھا اس دوران مشتعل ہجوم نے علاقے میں درجنوں گاڑیوں کو توڑ پھوڑ کیا ،جن میں بعض کو آگ کے حوالے ۔ادھر انتظامیہ نے علاقے میں حالات کو کشیدہ ہونے کے بعد پورے جموں میں کرفیو کا نفاذ عمل میں لا کر فوج کو بھی طلب کیاگیا۔ ادھر گوجر بکروال لیڈرمحمد یاسین پسوال سمیت متعدد سیاسی سماجی لیڈان سمیت متعدد لیڈان نے نوجوانوں سے صبر و تحمل کرنے اورعلاقے میں بھائی چارے کو قائم رکھنے پر زور دیا ۔کشمیر نیوز سروس ( کے این ایس ) کے مطابق وادی کشمیر کے ضلع پلوامہ کے لتہ پورہ علاقے میں خود کش حملے میں ہلاک ہوئے سی آر پی ایف اہلکاروں کی ہلاکت کے بعد جموں چیمبر آف کامرس کی کال پر جموں جمعہ کے روز مکمل بند رہا ۔اس دوران پورے جموں میں تمام کار باری ادادرے مکمل بند رہے جبکہ سڑکوں سے گاڑیاں بھی غائب رہی۔ جموں سے نامہ نگار اطلاع دی ہے کہ ہڑتال اور احتجاجوں کے دوران صبح 9بجے کے قریب مختلف علاقوںنوجوانوں کی ایک بڑی تعدادجلوس کی صورت میں گوجر نگر کی طرف پیش قدمی کر رہے تھے۔نمائندے نے عینی شاہدین کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا موٹر سائیکلوں پر سوار ، بھارت کا ترنگا اْٹھائے مظاہرین نے گاڑیوں اور رہائشی مکانوں پر سنگباری کی اور پریم نگر علاقے میں کچھ گاڑیوں کو نذر آتش بھی کیا۔بتایا جاتا ہے ہجوم میں شامل شر پسندوں نے سب سے پہلے عماروں کے باہر کھڑی کشمیر نمبر کے گاڑیوں کو بڑے پیمانے پر توڑ پھوڑ کرنے کے علاوہ انہیں آگ کے آگ حوالے کیا جس کے بعد جموں میں مقیم کشمیر ی لوگ زبردست خوف دہشت کے شکار ہوئے ہیں اس دوران ملازم انجمنوں نے واپس کشمیر جانے کامن بنا لیا ہے ۔ حکام نے علاقے میں کرفیو نافذ کردیا لیکن اس کے باوجود بھیڑ جمع ہوکر تشدد پر اْتر آئی۔حکام نے کہا کہ امن و قانون بنائے رکھنے کیلئے فورسز اور پولیس کی بھاری نفری کی تعیناتی عمل میں لائی گئی ہیتاہم اس کے باوجود بھی حالات قابو سے باہر ہوئے ۔جس کے بعد حکام نے علاقے میںفوج کو بھی طلب کیا اورپورے جموں میں انٹرنیٹ سروس بھی معطل کر رکھی ہے۔ادھر انتظامیہ نے علاقے میں حالات کو کشیدہ دیکھ کر صوبے کے کئی علاقوں میں انٹرنیٹ سروس کو معطل رکھا ہے ادھر جموں میں کروڑوں کی املاک کو نقصان پہنچانے اور نذر آتش کرنے پر لوگوں نے زبردست برہمی کا اظہار کیا۔ ادھر جموں کشمیر گوجر بکروال کانفرنس کے جنر سیکرٹری محمد یاسین پسوال نے جموں واقعے پر زبردست برہمی کا اظہار کرتے ہوئے سبھی لوگوں کو آپسی بھائی چارہ قائم رکھنے کی اپیل کی ہے ۔ادھر دیگر کئی سیاسی اور سماجی انجمنوں نے بھی جموں واقعے پر زبردست الفاظ میں مذمت کر تے ہوئے انتظامیہ کو کشمیری لوگوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کی اپیل کی ہے ۔خیال رہے وادی کشمیر کے ضلع پلوامہ کے لتہہ پورہ اونتی پورہ میں ایک خود کش حملے میں فورسز کے49اہلکار ہلاک ہوئے ہیں ۔اس دوران حملے میں ہلاکتوں کے خلاف جموں تاجر برادری نے جموں بند کی کال دی تھی جس کی حمایت جموں کے وکلااور نیشنل کانفرنس نے بھی کی تھی۔