لینڈ ریکارڈ پروجیکٹ کی جدید کاری ویری کاریونیو ٹریننگ انسٹی چیوٹ کا دورہ ،ڈی آئی ایل آر ایم پی کی پیش رفت کا جائزہ لیا

اڑان نیوز
جموں//مال ، حج و اوقاف اور پارلیمانی امور کے وزیر عبدالرحمان ویری نے کل گول گجرال جموں میں سینٹرل ریکارڈ روم کا دورہ کیا اور اراضی ریکارڈ کی جدید کاری اور ریکارڈ کے رکھ رکھاؤ کے بارے میں برسرِ موقعہ جانکاری حاصل کی ۔ وزیر کے ہمراہ فائنانشل کمشنر مال لوکیش جھا ، کمشنر سیکرٹری مال شاہد عنایت اللہ اور ڈویژنل کمشنر جموں ہمنت شرما بھی تھے ۔ اس دوران وزیر کو سینٹرل ریکارڈ روم میں ریکارڈ کے رکھ رکھاؤ اور تواریخی ریکارڈ کو محفوظ رکھنے کے حوالے سے کئے جا رہے اقدامات کے بارے میں جانکاری دی گئی۔ ریجنل ڈائریکٹر لینڈ ریکارڈ سروے جموں ، سانبہ اور کٹھوعہ ، رفعت کوہلی نے وزیر کو ریکارڈ کی ڈیجیٹائزیشن کے عمل کے مختلف مدعوں کے بارے میں جانکاری دی ۔ وزیر کو جانکاری دی گئی کہ اب تک 11314268 دستاویزات اور 17911 مسویز کی سکیننگ کی گئی ہے علاوہ ازیں 1161 کیڈسٹرل نقشوں کی ڈیجیٹائزیشن بھی عمل میں لائی گئی ہے ۔ اس موقعہ پر مزید بتایا گیا کہ جموں صوبے میں 3771 ریونیو ولیجز میں سے 2798 ولیجز میں ریکارڈ کی سکیننگ کا کام جاری ہے ۔ انہیں کئی دیگر سرگرمیوں کے بارے میں بھی تفصیل سے جانکاری دی گئی ۔وزیر کو بتایا گیا کہ سینٹرل روم میں موجود ریکارڈ کو دو سے تین ماہ کے اندر اندر سکیننگ کی جائے گی ۔ ریجنل ڈائریکٹر لینڈ ریکارڈ سروے نے اس موقعہ پر ریکارڈ روم کے حوالے سے کئی معاملات اُجاگر کئے ۔ وزیر نے اس موقعہ پر سائنسی خطوط پر جدید ریکارڈ روم قائم کرنے کیلئے ڈی پی آر تیار کرنے کی ہدایت دی اور کہا کہ اس پروجیکٹ کیلئے ہر ممکن مدد فراہم کی جائے گی ۔ بعد میں وزیر نے ریونیو ٹریننگ انسٹی چیوٹ کا بھی دورہ کیا جہاں انہوں نے تربیت پانے والے پٹواریوں کے ساتھ بات چیت کی ۔ وزیر نے ملازمین کی کیپسٹی بلڈنگ کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ خصوصی تربیتی کورسوں کا انعقاد سال بھر جاری رکھا جانا چاہیئے ۔ ویری نے کہا کہ ریونیو ٹریننگ انسٹی چیوٹ کو معقول رقومات بہم کی جائیں گی تا کہ یہ متواتر بنیادوں پر عملے کو تربیت دے سکے ۔