کوکرناگ میں جنگجو مخالف آپریشن پلوامہ میں مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے ہوائی فائرنگ

اڑان نیوز
سرینگر//صوف شالی کوکر ناگ میں جنگجو مخالف آپریشن کے دوران تشدد بھڑک اٹھا مشتعل ہجوم کو منتشر کرنے کیلئے اشک آور گیس کے گولے داغے گئے ۔ ادھر کریم آباد پلوامہ میں مشتعل نوجوانوں نے فوجی گاڑیوں پر پتھراو کیا ، تشدد پر اُتر آئی بھیڑ کو منتشر کرنے کیلئے فوجی اہلکاروں نے کئی منٹوں تک ہوائی فائرنگ کی جس کی وجہ سے کریم آباد پلوامہ اور اُس کے ملحقہ علاقوں میں خوف ودہشت کا ماحول پھیل گیا ۔ دفاعی ذرائع کے مطابق جونہی فوجی اہلکاروں نے کریم آباد پلوامہ گاؤں کو محاصرے میں لے کر جنگجو مخالف آپریشن شروع کیا اس دوران نوجوانوں نے پتھراو کیا جنہیں منتشر کرنے کیلئے ہلکا لاٹھی چارج کیا گیا ۔جنگجوو¿ں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد سیکورٹی فورسز نے صوف شالی کوکر ناگ کے گاؤں کو محاصرے میں لے کر گھر گھر تلاشی کارروائی شروع کی جس دوران لوگ مشتعل ہوئے اور سڑکوں پر آکرا حتجاجی مظاہرئے کئے ۔ نمائندے کے مطابق مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے سیکورٹی فورسز نے بے تحاشہ ٹیر گیس شلنگ کے ساتھ ساتھ پلیٹ چھرے بھی استعمال کئے جس کے نتیجے میں گاؤں میں خوف ودہشت کا ماحول پھیل گیا اور لوگ محفوظ مقامات کی طرف بھاگنے لگے۔ دفاعی ذرائع کے مطابق صوف شالی کوکر ناگ میں کئی جنگجو چھپے بیٹھے ہیں جنہیں
قابو میں کرنے کے لئے فرار ہونے کے راستوں پر پہرے بٹھا دئے گئے ہیں۔ ادھر کریم آباد پلوامہ میں اُس وقت حالات دگرگوں ہوگئے جب علاقہ میں فوجی اہلکار وارد ہوئے جس دوران نوجوانوں نے سڑکوں پر آکر اسلام و آزادی کے حق میں نعرے بازی کی ۔ نمائندے کے مطابق فوجی اہلکاروں نے جونہی گھر گھر تلاشی لینے کی کوشش کی نوجوانوں نے پتھراو کیا جنہیں منتشر کرنے کیلئے فورسز اہلکاروں نے کئی منٹوں تک ہوائی فائرنگ کی ۔ نمائندے کے مطابق ہوائی فائرنگ سے کریم آباد پلوامہاور اس کے ملحقہ علاقوں میں دہشت پھیل گئی اور لوگ محفوظ مقامات کی طرف بھاگنے لگے۔ ذرائع کے مطابق لوگوں کے تیور دیکھ کر فورسز اہلکار علاقے سے بھاگ گئے۔
۔پلوامہ سے نمائندے نے اطلاع دی ہے کہ بدھ کی صبح ایک کیسپر گاڑی میں سوارفوج کی55آر آر سے وابستہ اہلکار کریم آباد علاقے میں معمول کی گشت پر تھے کہ گاڑی پر کئی اطراف سے اچانک سنگباری شروع کی گئی۔یہ وہی علاقہ ہے جہاں جنگجوؤں کی تلاش میں آنے والے سیکورٹی فورسز اہلکاروں کو ہمیشہ سخت مزاحمت کا سامنا رہتا ہے ۔فوجی گاڑی کو دیکھتے ہی نوجوانوں نے نہ صرف سڑک پر رکاؤٹیں کھڑی کیں بلکہ فوجی گاڑی پرپتھراؤ شروع کیا،تاہم فوج نے فوری طور جوابی کارروائی عمل میں لائی اور مشتعل ہجوم کو منتشر کرنے کےلئے ہوا میں گولیوں کے کئی راؤنڈ فائر کئے۔پتھراؤ کچھ دیر کےلئے جاری رہا اور فوجی اہلکاروں نے مظاہرین کا تعاقب کرکے انہیںبھگادیا۔اس صورتحال کی وجہ سے علاقے میں اتھل پتھل مچ گئی اور کچھ دیر کےلئے حالات پر تناؤ رہے۔اسی بیچ فوجی اہلکار وہاں سے چلے گئے ۔ نمائندے نے بتایا کہ واقعہ کے بعد مقامی لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے سڑکوں پر آکر احتجاجی مظاہرے کئے اور فوج کے خلاف نعرے بازی کی۔انہوں نے الزام عائد کیا کہ فوجی اہلکاروں نے لوگوں پر راست فائرنگ کی جس کے نتیجے میں کئی گولیاں دیوانوں اور رہائشی مکانوں کو جالگی، تاہم خوش قسمتی سے کسی قسم کا کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔