پہاڑی طبقہ کے موجودہ وسابقہ اراکین قانون سازیہ اور آل جموں وکشمیرپہاڑی ٹرائب جوائنٹ فورم وزیر اعلیٰ سے ملاقی پہاڑی طبقہ کوتین فیصد ریزرویشن دینے کے تاریخی فیصلہ کے لئے محبوبہ مفتی کا شکریہ ادا کیا

اڑان نیوز
جموں //پہاڑی طبقے سے تعلق رکھنے والے نمائندوں کے ایک وفد نے کل وزیرا علیٰ محبوبہ مفتی کے ساتھ ملاقات کی اور پہاڑی طبقے کے لوگوں کو تین فیصد ریزرویشن دِلانے کے اُن کے تواریخی فیصلے کے لئے شکر یہ ادا کیا۔اس وفد میں رکن قانون سازیہ جاوید حسین بیگ، شاہ محمد تانترے ، راجا منظور احمد ، جاوید مرچال اور سابق ارکان قانون سازیہ مشتا ق بخاری ، شبیر احمد خان، محمد رشید قریشی ، مرزا عبدالرشید اور اشوک شرما کے علاوہ طبقے کے کئی دیگر سینئر نمائندے بھی شامل تھے۔وفد نے اس فیصلے کو پہاڑی طبقے کی شناخت قائم کرنے کے لئے اہم قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس سے پہاڑی طبقے کو سماجی ، سیاسی اور اقتصادی طور بااختیاربنانے میں مدد ملے گی۔انہوںنے وزیر اعلیٰ سے کہا کہ اس فیصلے سے انہیں ایک شناخت ملی ہے ۔نمائندوں نے اس معاملے کی تن دہی کے ساتھ پیروی کرنے کے لئے وزیر اعلیٰ کا شکریہ ادا کیا اور امید ظاہر کی کہ اس طبقے کو درپیش دیگر مسائل بھی وزیر اعلیٰ کی قیادت میں حل کئے جائیں گے۔وفد کا شکریہ ادا کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے کہا کہ انہیں اس بات کے لئے مسرت ہو رہی ہے کہ ان کی حکومت نے پہاڑی طبقے کے لوگوں کو ایک شناخت دی ہے اور اس وعدے کو پورا کیا ہے جو مختلف حکومتوں نے ان کے ساتھ کیا تھا۔محبوبہ مفتی نے کہا کہ ان کی حکومت ریاست کے تمام طبقوں کے لوگوں کی ترقی کو یقینی بنانے کے لئے کام کر رہی ہے ۔انہوں نے پہاڑی طبقے کے لیڈروں سے کہا کہ وہ ریاست کی مجموعی ترقی اور خوشحالی کو یقینی بنانے میں اپنا بھر پور رول ادا کریں۔آل جے اینڈ کے پہاڑی ٹرائب جوائنٹ فورم کے ایک وفد نے بھی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کے ساتھ ملاقات کی اور طبقے کو تین فیصد ریزرویشن دِلانے کے لئے ان کا شکر یہ ادا کیا۔