1037 نوجوانوں کو’اُمید اسکیم‘کے تحت ملک بھر کے پروجیکٹ عمل آوری ایجنسیوں میں روز گار سے متعلق تربیت دی جارہی ہے: حق خان

اڑان نیوز
جموں//دیہی ترقی و پنچائت کے وزیر عبدالحق خان نے آج یہاں ایک میٹنگ کے دوران اُمید سکیم کی عمل آوری کا جائیزہ لیا۔میٹنگ میں مشن ڈائریکٹر ایس آر ایل ایم بخشی جاوید ہمایوں، ڈائریکٹر این آئی آر ڈی ڈاکٹر شنکر دت، ایڈیشنل مشن ڈائریکٹر جموں کے علاوہ دیگر افسران اور پروجیکٹ عمل آوری ایجنسیوں کے نمائندے بھی موجود تھے۔وزیر موصوف کو اس موقعہ پر جانکاری دی گئی کہ رائے پور، بنگلور اور جموں میں مختلف پروجیکٹ عمل آوری ایجنسیوں میں1037 نوجوانوں کو روز گار سے متعلق تربیت فراہم دی جارہی ہے اور ان نوجوانوں کے تمام اخراجات حکومت برداشت کرتی ہے۔وزیر کو بتایا گیا کہ نوجوانوں کو ایمرجنسی میڈیکل ٹیکنیشن، ڈائیلیسز ٹیکنیشن، او ٹی ٹیکنیشنز، ڈیوٹی منیجر، بنکنگ، بی پی او، ہاسپی ٹیلٹی اور دیگر شعبوں کی تربیت دی جارہی ہے۔عبد الحق نے محکمہ کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے پروجیکٹ عمل آوری ایجنسیوں پر زور دیا کہ وہ زیادہ سے زیادہ نوجوانوں کو تربیت کے دائرے میں لانے کے عمل میں تیزی لائیں۔ وزیر نے مزید کہا کہ جے کے ایس آر ایل ایم کو ریاست سے تعلق رکھنے والے1.24 لاکھ نوجوانوں کو تربیت دینے اور انہیں روز گار دلانے کا کام سونپا گیا ہے اور اس مقصد کے لئے حمائت سکیم کے تحت 3 برسوں کے لئے1601.51 کروڑ روپے مختص رکھے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ محکمہ کو اس کام کے لئے104.24 کروڑ روپے وصول ہوئے ہیں جن میں سے اب تک45.21 کروڑ روپے صرف کئے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ حمائت ریاستی نوجوانوں کے لئے سکل ڈیولپمنٹ کم پلیس منٹ پروگرام ہے اوراسے دیہی ترقیات محکمہ کی مرکزی وزارت کی طرف سے ڈی ڈی یو جی کے وائی کے تحت عملایا جارہا ہے اور اس میں دیہی علاقوں کے غریب بے روز گار نوجوانوں کو روز گار دلانے کی طرف فوری توجہ دی جارہی ہے۔