خنزیری بخار سے ریاست میں32اموات! کل متاثرہ مریضوں کی تعداد137، وباء سے وادی زیادہ متاثر

الطاف حسین جنجوعہ
جموں//حکومت نے اعتراف کیا ہے کہ ریاست میں خنزیری بخار(سوائن فلو)سے 32افراد موت کا نوالہ بن گئے۔ ایم ایل سی قیصر جمشید لون کے ایک سوال کے تحریر جواب میں وزیر صحت بالی بھگت بتایاکہ کشمیر صوبہ میں خنزیری بخار کی وباء سے زیادہ لوگ متاثر ہورہے ہیں۔انہوں نے بتایاکہ ریاست میںسوائن فلو سے متاثرہ کل مریضوں کی تعداد137ہے جس میں سے 2اس وقت زیر علاج ہیں،28کی اموات ہوگئیں اور 107کو مناسب علاج ومعالجہ کے بعد اسپتال سے ڈسچار ج کردیاگیا۔32 میں ہوئی اموات میںسے 28 کا تعلق صوبہ کشمیر اور 4کا تعلق جموں صوبہ سے ہے۔ان میں بڈگام سے 6، سرینگر ضلع سے 6، اننت ناگ سے 3، گاندربل سے 7،بارہمولہ سے 2،کولگا م سے3، پلوامہ کے اونتی پورہ سے ایک شامل ہے ۔ صوبہ جموں سے جن چار افراد کی سوائن فلو سے موت ہوئی کا تعلق جموں، را م بن، راجوری اور مہور ریاسی سے ہے۔جواب میں بتایاگیاہے کہ گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں اور سرینگر یں سوائن فلو سے متاثرہ مریضوں کے لئے اعلیحدہ سے وارڈ قائم کئے گئے ہیں۔ جہاں پر آکسیجن، ہوا سپلائی اور وینٹی لیٹر کی سہولت ہے، ان مریضوں کی دیکھ بھال کے لئے علیحدہ سے چوبیس گھنٹے سٹاف مہیا کروایاجارہے۔ N1N1ٹسٹنگ لیبارٹری کو سی ڈی اسپتال سرینگر اور جی ایم سی میں فعال بنائے گئے ہیں۔ جہاں ُر N1H1ڈائی گنوسٹک ٹسٹ کئے جاتے ہیں۔ تمام ہیلتھ کیئر ورکروںکو پرسنل پروٹیکٹیو ایکویپمنٹس (PPE)کو مہیا کئے گئے ہیں۔ عام عامہ میں بیداری لانے اور ایڈوائزری جاری کے لئے پرنٹ والیکٹرانک میڈیا کی خدمات حاصل کی جارہی ہیں۔