کشمیر کوئی مسئلہ نہیں ریاست کی سابق حکومتوں نے اس مسئلے کو پیدا کیا: جتندر سنگھ

نیوز ڈیسک
نئی دلی//ریاست جموںوکشمیر کی سابق حکومتوں پر کشمیر کے مسئلے کو بین الاقوامی فورموں پر اُجاگر کرنے کیلئے ذمہ دار ٹہراتے ہوئے وزیر اعظم ہند کے دفتر میں تعینات وزیر مملکت نے کہاکہ ’’ہمیں پاکستانی زیر انتظام کشمیر کی بات کرنی چاہئے نہ کہ کشمیر کی ‘‘۔انہوںنے کہاکہ کشمیر کوئی مسئلہ نہیں ہے بلکہ یہاں کے لوگوں نے بھارت کے ساتھ الحاق کیا ہے۔نئی دہلی میں تقریب کے حاشیہ پر ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے وزیر اعظم ہند کے دفتر میں تعینات وزیر مملکت ڈاکٹر جتندر سنگھ نے سیاسی پارٹیوں پر زور دیا ہے کہ وہ پاکستانی زیر انتظام کشمیر کے علاقہ کو پاکستان سے چھڑانے کیلئے اپنی آواز بلند کریں۔ انہوں نے کہاکہ میں یہ واضح کرنا چاہتا ہوں کہ کشمیر کو ئی مسئلہ نہیں کیونکہ یہاں کے لوگوں نے بار بار یہ ثابت کردیا ہے کہ وہ بھارت کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ ریاست جموںوکشمیر کی سابق حکومتوں نے کشمیر کے مسئلے کو بین الاقوامی فورموں پر اُجاگر کیا جس کی وجہ سے آج یہ صورتحال دیکھنے کو مل رہی ہے۔ ڈاکٹر جتندر سنگھ کے مطابق کشمیر کے سلسلے میں ہمیں اب اپنا لائحہ عمل تبدیل کرنا چاہئے اور پوری بین الاقوامی برادری کو بتانا چاہئے کہ کشمیر کوئی مسئلہ نہیں بلکہ کشمیر کے ایک حصے پر پاکستان نے غیر قانونی طورپر قبضہ جمایا ہے ۔ مہاراجہ کے ساتھ الحاق شرائط پر ہونے کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں مرکزی وزیر مملکت نے کہا کہ جس طرح سے ملک کی دوسری ریاستوں نے الحاق کیا اسی طرح اُس وقت کے مہاراجہ ہری سنگھ نے بھی بھارت کے ساتھ الحاق کیا ہے اور اب اس پر سوالات اٹھانے کی کوئی گنجائش باقی نہیں ہے۔ انہوںنے کہاکہ جس طرح سے یو پی ، بہار اور پنجاب بھارت کے حصے ہیں اسی طرح کشمیر بھی بھارت کا اٹوٹ انگ ہے۔ وزیر اعظم ہند کے دفتر میں تعینات وزیر مملکت کے مطابق ریاست کی سابق حکومتوں کی غلطی کی وجہ سے ہی آج اس طرح کی صورتحال دیکھنے کو مل رہی ہے۔ مرکزی وزیر مملکت کے مطابق موجودہ حکومت نے ریاست خاص کرو ادی کشمیر میں ملی ٹینسی کی کمر توڑ دی ہے تاہم ریاستی کی بعض سیاسی پارٹیوں کو یہ ہضم ہی نہیں ہو رہا ہے کیونکہ انہیں یہ معلوم ہے کہ عسکریت کا راگ الاپ کر وہ اقتدار کی مسند پر جلوئے افروز ہو رہے ہیں۔ وزیر مملکت کے مطابق جب ملی ٹینسی کا خاتمہ ہوگا تو بعض سیاسی پارٹیوں کی سیاست بھی دفن ہو جائے گی ۔