انتہائی شرمناک واقعہ مخلوط حکومت کی لاپرواہی کا نتیجہ:میاں الطاف

الطاف حسین جنجوعہ
جموں //نیشنل کانفرنس کے سنیئر لیڈر، سرکردہ گوجر رہنما اور رکن اسمبلی کنگن میاں الطاف احمد نے مخلوط سرکار کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ صوبہ جموں میں ایک مخصوص طبقہ کے ساتھ زیادتیاں ہورہی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہم نے پہلے بھی اس پر تشویش ظاہر کی ہے کہ خاص طورسے کٹھوعہ میں مسلم طبقہ ، گوجر بکروالوں پر ظلم وستم کیاجارہاہے، حکومت ان کے جانی ومالی تحفظ کو یقینی بنائے لیکن اس طرف حکومت نے کوئی توجہ نہ دی، جس کی وجہ سے آج ایسا واقعہ پیش آیا جو ہم سب کےلئے شرم ناک ہے۔ انہوں نے کہا ” ایسا لگتا ہے کہ کٹھوعہ میں امن وقانون نام کی کوئی چیز ہی نہیں ہے،جب یہ بچی اغواہوئی تھی تو اُس کے فورناً بعد پولیس کو حرکت میں آنا چاہئے تھا لیکن اب 8دن بعد اُس کی لاش ملی ہے یہ بڑا افسوس ناک واقعہ ہے کہ ایک غریب آدمی کی بچی اس طرح سے مر گئی ،آج حکومت کا یہ کہنا ہے کہ ہم نے ایک کمیٹی بنائی ہے اس کی تحقیقات کےلئے اُس سے کوئی مسئلہ حل ہونے والا نہیں ہے ۔ انہوں نے کہاکہ حکومت کو تین دن کے اندر اندر اس کی کارروائی کرنی چاہئے۔