سینٹرل یونیورسٹی میں یوگا پر2روزہ نیشنل سمینار شروع یوگا کو مقبول بنانے کیلئے مشترکہ کوششوں کی ضرورت ، انسانی صحت کی بہتری کیلئے آیوش مفید طرز علاج :بالی بھگت

اڑان نیوز
جموں//صحت و طبی تعلیم کے وزیر بالی بھگت نے سینٹرل یونیورسٹی جموں میں دو روزہ قومی سمینار کا افتتاح کیا جو ’ رول آف یوگا ‘ کے عنوان پر منعقد کیا گیا تھا۔ ایونٹ کا انعقاد سینٹرل یونیورسٹی کے یوگا سینٹر نے مرکزی وزارت برائے آیوش کے اشتراک سے کیا تھا۔ لگ بھگ 150ڈیلی گیٹوں نے سمینا ر میں حصہ لیا ۔وائس چانسلر سینٹرل یونیورسٹی آف جموں پروفیسر اشوک ایما،سیکرٹری ٹیکنیکل اور ڈائریکٹر آئی ایس ایم ڈاکٹر عبدالکبیر ، انچارج یوگا سینٹر ڈاکٹر ڈی ایس چودھری ، ڈاکٹر اوپندر بابو خطری ، ڈاکٹر سنگ مترا ، ڈاکٹر ادھم سنگھ ، ڈاکٹر سریندر کمار ،ڈاکٹر کمکشیا کمار ،ڈاکٹر سبودھ تیواڑی ، ڈاکٹر اوم جی کے علاوہ طلباء کی ایک بڑی تعداد اس موقعہ پر موجود تھی۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر نے کہا کہ یوگا قدیم زمانے سے چلا آرہا طرز علاج ہے جسے دنیا بھرمیں مختلف بیماریوں سے بچنے اور جسم کو تندرست رکھنے میں اپنایا جاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی کوششوں کی بدولت یوگا عالمی سطح پر تسلیم کیا گیا اورہر سال 21؍جون کو یوگاکی تقریبات جوش و خروش کے ساتھ منائی جاتی ہیں۔یوگا کی اہمیت کے مد نظر حکومت نے جموںمیں آیورویدک کالج کو از سر نو قائم کیا ہے جس میں لگ بھگ چار دہائیوں کے بعد بی اے ایم ایس کی 50نشستیں مقرر کی گئی ہیں۔انہوں نے کہاکہ یونانی میڈیکل کالج کشمیرمیں اگلے سال سے اپنا کام کاج شروع کرے گااور لداخ میں بھی آیوش سیکٹر کو ترقی دینے کے سلسلے میں اقدامات کئے جارہے ہیں۔پروفیسر اشوک ایما ، ڈاکٹر عبدالکبیر اور دیگر یوگا ماہرین نے اس موقعہ پر یوگا اور آیوش کی اہمیت اُجاگر کی۔ وائس چانسلر نے مہمانوں کو سوینئرس سے نوازا اور معزز شرکأ کا اس سمینار میں حصہ لینے کے لئے ان کا شکریہ ادا کیا۔