بھاجپا خیمہ میں جشن کی لہر… پٹاخے سرکے اور مٹھائیاں تقسیم کیں ان انتخابات کا اثر جموں وکشمیر پر بھی پڑے گا:ست شرما

الطاف حسین جنجوعہ
جموں// گجرات اور ہماچل پردیش کے اسمبلی انتخابات کے نتائج کا جشن پیر کو ملک کے دوسرے حصوں کی طرح جموں وکشمیر کے دونوں خطوں میں بھی منایا گیا۔صبح سے ہی بھاجپا کے حق میں رحجانات آنے پر ورکروں میں خوشی کا سماں دیکھنے کو ملا جس میں وقت گذرنے کے ساتھ ساتھ تیزی آتی گئی۔ بی جے پی کارکنوں نے متعدد مقامات پر سڑکوں پر آکر پٹاخے سر کئے جبکہ پارٹی کے ریاستی، صوبائی اور ضلعی دفاتر پر مٹھائیاں تقسیم کی گئیں۔جموں میں پارٹی صدر دفتر پر ست شرما کی قیادت میں لیڈران، عہدادران، ورکروں نے جشن منایا۔اس کے علاوہ جموں بھر میں متعدد مقامات پر بی جے پی کارکنوں نے سڑکوں پر نکل کر پٹاخے سر کئے اور بی جے پی و وزیراعظم نریندر مودی کے حق میں نعرے بازی کی۔ ست شرما نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ گجرات اورہماچل میں وکاس کی جیت ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا ’آج پارٹی کے ریاستی صدر دفتر پر خوشی کا ماحول ہے سبھی کارکن خوشی سے جھوم رہے ہیں۔ گجرات اور ہماچل دونوں جگہوں پر بی جے پی اکثریت کے ساتھ حکومت بنا رہی ہے‘‘۔انہوں نے مزید کہاکہ’’ آج جو جیت ہوئی ہے، وہ وکاس (ترقی) کی جیت ہے۔ ذات پات اور رنگ ونسل کی بنیاد پر لوگوں کوتقسیم کرنے والوں کی ہار ہوئی ہے۔ مرکزی حکومت میں نریندر مودی جی اور گجرات میں 22 برس پرانی سرکار کی جیت ہے۔ ہماچل کو ملاکر 19 ریاستوں میں آج بی جے پی کی سرکار ہے‘۔ اس موقع پر ’بھارتیہ جنتا پارٹی زندہ باد، نریندر بھائی مودی زندہ باد اور بھارت ماتا کی جے‘ کے نعرے بلند کئے گئے۔ اس دوران ریاست میں صنعت و حرفت کے وزیر چندر پرکاش گنگا نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ گجرات اور ہماچل انتخابات میں پاکستان کے حق نعرے لگانے والوں کی ہار ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا ’میں دیش واسیوں کو اپنے دل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتا ہوں۔ گجرات اور ہماچل کی جیت 2019 کے عام انتخابات کی تصویر صاف کررہی ہے۔ کانگریس نے انتخابی مہم کے دوران تمام حربے اپنائے ، لیکن وہ تمام تر حربے ناکام ثابت ہوئے۔ ان انتخابی نتائج کا جموں وکشمیر پر اثر پڑے گا۔ پاکستان ان انتخابات کو دیکھ رہا تھا۔ وہ طاقتیں جو پاکستان کے نعرے لگاتے تھے اور کہتے تھے کہ بھارت تیرے ٹکڑے ہوں گے انشاء اللہ، آج ان کی ہار ہوئی ہے۔ آج دیش پریمیوں کی جیت ہوئی ہے۔ آپ جانتے ہیں کہ منی شنکر ائر اور سابق وزیر اعظم نے پاکستانی اہلکاروں کے ساتھ پرائیویٹ میٹنگ کی اور کہا کہ ہماری مدد کیجئے‘۔ دریں اثناء جنوبی کشمیر کے قصبہ اننت ناگ میں بی جے پی کارکنوں نے سڑکوں پر آکر ’جیت گیا بھائی جیت گیا۔ مودی صاحب جیت گیا۔ نریندر بھائی قدم بڑھاؤ ہم تمہارے ساتھ ہیں۔ جیت ہماری انشاء اللہ‘ کے نعرے بلند کئے۔ نائب وزیر اعلیٰ ڈاکٹر نرمل سنگھ نے وزیر اعظم نریندر مودی اور اُن کی پارٹی کو گجرات اور ہماچل پردیش کے چناؤ جیتنے پر مبارک باد دی ہے ۔ڈاکٹر سنگھ نے کہا ہے کہ اس جیت سے ظاہر ہوتا ہے کہ لوگ وزیر اعظم کے ترقیاتی ایجنڈے اور پالیسیوں کی توثیق کرتے ہیں ۔ انہوں نے وزیر اعظم کی قیادت پر ایک مرتبہ پھر اعتماد کا اظہار کیا ہے۔نائب وزیر اعلیٰ نے اُمید ظاہر کی کہ وزیر اعظم مُلک بھر میں ترقیاتی سرگرمیوں کو دوام بخشیں گے تا کہ مُلک کے سماجی و اقتصادی منظر نامے میں موثر بدلاؤ دیکھنے کو ملے۔ ادھر جموں وکشمیر ہائی کورٹ جانی پور جموں میں وکلاء نے بھی بھاجپا کی جیت پر جشن منایا۔