وادی چناب میں پیشگی سرمائی انتظامات نہ کے برابر ، سڑکوں سے برف ہٹانے والی مشینیں نہیں

ڈوڈہ :رابطہ سڑکیں وگلی کوچے زیر آب،بجلی متاثر
اشتیاق ملک
گندوہ//ڈوڈہ ضلع میں دوسرے بالائی علاقوں میں دوسرے روز بھی برفباری وبارشوں کا سلسلہ جاری رہا جس سے سردی کی شدت میں مزیداضافہ ہوا۔پیر کے روز شروع ہوئی برفباری و بارشیں دوسرے روز بھی جاری رہیں جس کے نتیجے میں بیشتر علاقوں میں پانی و بجلی نظا م متاثر ہوا ہے جبکہ سڑکیں زیر آب ہوگئیں ہیں۔سب ڈویژن گندوہ کے ڈھڈکائی ، کلہوتران ، چنگا ، کالجگاسر ، چلی پنگل کے بالائی دیہاتوں میں دو سے پانچ انچ کی برف ریکارڈ کی گئی ۔میدانی علاقوں میں شدید بارش ہوئیں۔مسلسل برفباری وبارشوں سے بجلی کے ترسیلی نظام میں بھی خلل آئی ہے جس کے نتیجے میں تحصیل چلی پنگل وگندوہ کے درجنوں دیہات گھپ اندھیرے میں ہیں ۔ٹھاٹھری کلہوتران شاہراہ سمیت اندرونی دیہات کو جوڑنے والی رابطہ سڑکیں زیر آب ہوگئیں ۔کئی مقامات پر چھوٹے پتھر گرنے کا سلسلہ بھی شروع ہوا تاہم آخری اطلاع ملنے تک ٹریفک نظام بحال کر دیا گیا ہے مگر مسلسل برفباری وبارش کی وجہ سے بجلی نظا م بحال نہ ہوسکا۔سب ڈویژن ٹھاٹھری کی تحصیل کاہرہ ، چرالہ ،فیگسو میں بھی ہلکی برفباری وبارش ہوئی جس سے عوامی مشکلات میں اضافہ ہوا۔سرکاری ذرائع کے مطابق سیول وپولیس انتظامیہ نے اپنی تمام مشینری کو متحرک رکھا ہے ۔ وزیر اعلی کی ہدائت پر پہاڑی علاقوں میں راشن ودیگر بنیادی سہولیات وافر مقدار میں دستیاب رکھی گئیں ہیں ۔برفباری وبارشوں کی وجہ سے جہاں کسانوں وزمینداروں نے راحت کی سا نس لی وہیں سردی کی شدت میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ایم ایل اے بھدرواہ دلیپ سنگھ پریہار نے بھی ضلع ومقامی انتظامیہ کو ہدائت دی ہے کہ برفباری وبارشوں کے دوران بھدرواہ ، چرالہ ،کاہرہ وبھلیسہ میں ہر ممکن سہولیات دستیاب رکھی جائیں۔اڑان سے بات کرتے ہوئے ایس ڈی ایم گندوہ دل میر چوہدری نے بتایا کہ سیول وپولیس انتظامیہ متحرک ہے ۔اس سلسلہ میں تحصیل مقامات پر کنٹرول رو بھی کھولے گئے ہیں۔دریں اثناء ضلع کشتواڑ کی پہاڑی تحصیل بونجواہ میں بھی برفباری وبارشوں سے عام زندگی متاثر ہوئی ہے جبکہ سڑکیں وگلی کوچے خستہ حال ہوئے ہیں۔