عارضی ملازمین کی مستقلی

وعدہ وفا ہونے کو ہے
باقاعدہ حکم ،ایک ہفتہ کے اندر متوقع
سری نگر//مستقلی کے منتظر عارضی ملازمین کیلئے بڑی خوش خبری دیتے ہوئے وزیر خزانہ ڈاکٹر حسیب درابو نے منگل کے روز اعلان کیا کہ اگلے ایک ہفتے کے اندر ڈیلی ویجروں اور کیجول لیبروں کی باقاعدگی کا حکم نامہ جاری کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ عارضی ملازمین کی ملازمتوں کو باقاعدہ بنانے سے متعلق جاری کئے جانے والے ایس آر ائو کی کاپیاں تمام سرکاری محکموں کو بھیج دی جائیں گی تاکہ مستقلی کا عمل جلد سے جلد شروع ہوکر مکمل کیا جاسکے ۔ کشمیر نیوز سروس کو معلوم ہوا کہ ریاستی سرکار نے مختلف سرکاری محکموں میں گزشتہ کئی کئی برسوں اور دہائیوں سے بطور ڈیلی ویجر اور کیجول لیبر کام کرنے والے 60 ہزار سے زیادہ عارضی ملازمین کی ملازمتوں کو باقاعدہ بنانے کا ایک منصوبہ مرتب کیا ہے ۔ وزیر خزانہ ڈاکٹر حسیب درابو نے اس کی تصدیق کرتے ہوئے کے این ایس کو بتایا کہ ریاست کی اسمبلی میں انہوں نے مختلف سرکاری محکموں میں کام کرنے والے عارضی ملازمین کی مستقلی کا وعدہ کیا تھا اور وہ اس وعدے پر قائم ہیں ۔ ڈاکٹر درابو کا کہنا تھا کہ عارضی ملازمین یعنی ڈیلی ویجروں اور کیجول لیبروں کی مستقلی کا عمل اگلے ایک ہفتے کے اندر شروع کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کی کابینہ نے پہلے ہی ڈیلی ویجروں اور کیجول لیبروں کی ملازمتون کو باقاعدہ بنائے جانے کو منظوری دے رکھی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں اب ایک ایس آر ائو جاری کیا جائے گا ، جس کے تحت مختلف سرکاری محکموں میں طویل وقت سے کام کرنے والے عارضی ملازمین کی ملازمت باقاعدہ بن جائے گا ۔ وزیر خزانہ کا مزید کہنا تھا کہ اگلے ہفتے 5 یا 7 روز کے اند ر ایس آر ائو کو حتمی شکل دے کر جاری کیا جائے گا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ جب حکومتی سطح پر ایس آر ائو یا باضابطہ حکم نامہ جاری کیا جائے گاتو اس کی کاپیاں تمام سرکاری محکموں کو بھیج دی جائیں گی تاکہ وہاں کام کرنے والے ڈیلی ویجروں اورکیجول لیبروں کی ملازمتوں کو باقاعدہ بنانے کا محکمانہ عمل شروع کیا جاسکے ۔ خیال رہے رواں برس 23 اکتوبر کو وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی زیر صدارت ریاستی کابینہ کے ایک اجلاس میں کابینہ نے چیف سیکریٹری کی سربراہی والی کمیٹی کی جانب سے عارضی ملازمین کی مستقلی سے متعلق پیش کردہ رپورٹ کو منظور کیا تھا جبکہ اسی رپورٹ کی روشنی میں ایسے ملازمین کی ملازمتوں کو مستقل یا باقاعدہ بنائے جانے سے متعلق پیش کردہ روڑ میپ کو بھی منظوری دی گئی تھی ۔ بتایا جاتا ہے کہ جموںوکشمیر میں مختلف سرکاری محکموں میں 61 ہزار سے زیادہ عارضی ملازمین بطور ڈیلی ویجر اور کیجول لیبر کام کر رہے ہیں اور ان میں سے بیشتر کی عارضی معیاد ملازمت 20 برس سے زیادہ ہے ۔