دمسی پنچایت ادھینیپور کی عوام کا بجلی محکمہ کیخلاف احتجاج رکن اسمبلی ڈوڈہ نے 63کے وی ٹرانسفارمروقف کیا

محمد اصغر بٹ
ڈوڈہ// موسم سرما کی آمد سے ہی ڈوڈہ کے اکثر و بیشتر دیہات میںبجلی کی غیر اعلانیہ کٹوتی کی جارہی ہے۔ لوگوں کو موجودہ جدید دور میں بھی بنیادی سہولیت کو حاصل کرنے کے لئے دھوپ ہو یا بارش میں سخت احتجاج کے بعد ہی کچھ ملتا ہے۔ ضلع کے اندر بجلی ٹرانسفارمر کی سخت قلّت ہے ۔صارفین کو بجلی کے نام صرف چراغ نما روشنی ملتی ہے۔پیر ک وگاؤں دمسی پنچائت ادھینپور کے عوام نے ضلع صدر مقام ڈوڈہ میں احتجاج کیا ۔مظاہرین نے متعلقہ محکمہ پر بار بار ٹرانسفارمر کی مانگ کو پورا نہ کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ گزشتہ کئی برسوں سے علاقہ میں 25 kv کا ٹرانسفارمر نصب کیا ہوا ہے جبکہ گاؤں کی آبادی زیادہ ہونے کی وجہ سے صارفین کو بجلی نہ کے برابر ملتی ہے ۔ زیادہ لوڈ ہونے کی وجہ سے بار بار ٹرانسفامر جل جاتا ہے احتجاجی مظاہرین نے تقریباً ایک گھنٹہ تک گھنٹہ گھر دیسہ چوک پر احتجاج کیا ۔اس دوران گاڑی کی نقل حرکت بھی جزوی طور متاثر ہوئی ۔ایک گھنٹہ کے بعد متعلقہ افسر کے ساتھ بات چیت کی گئی تاہم احتجاجی مظاہرین نے مسلسل محکمہ کے خلاف احتجاج جاری رکھا۔ دریں اثناء رکن اسمبلی ڈوڈہ شکتی راج پریہار نے اپنے حلقہ جاتی فنڈس میں سے 63 kv ٹرانسفارمر دمسی گاؤں ادھینپور کو وقف کیا جس کے بعد مقامی لوگوں نے ایم۔ایل۔اے ڈوڈہ کا شکرایہ ادا کیا۔