ملی ٹینسی اور سنگبازی کا راتوں رات کوئی حل نہیں: جنرل راؤت دشمنوں کو منہ توڑ جواب دینے کیلئے بھارت کے پاس وافر مقدار میں ہتھیار

یو این آئی
وارانسی// بری فوج کے سربراہ بپن راوت نے کہا ہے کہ جموں و کشمیر میں ملی ٹینسی اور سنگبا زی کا کوئی راتوں رات حل نہیں نکالا جا سکتا ۔انہوں نے کہا ہے کہ دشمنوں کو منہ توڑ جواب دینے کے لئے بھارت کے پاس کافی ہتھیار ہیں، جنہیں مسلسل ”اپ گریڈ“ کیا جا ر ہا ہے۔گورکھا رائفلز کے 200 ویں یوم تاسیس کی تقریب میں یہاں شرکت کرنے آئے جنرل راوت نے جمعہ کے روز یہاں نامہ نگاروں کے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ملک کے دشمنوں کو منہ توڑ جواب دینے کے لئے بھارتی فوج کے پاس ہتھیاروں کی کمی نہیں ہے ۔جدید ہتھیاروں کو مزید ”اپ گریڈ“کیا جا رہا ہے۔بری فوج کے سربراہ نے کہا کہ جموں و کشمیر میں ملی ٹینسی کے مسئلہ کا حل راتوں رات نہیں ہو سکتا۔ وہاں سبھی سیکورٹی فورسز بہتر تال میل کے ساتھ اپنے اپنے کام کر رہے ہیں۔ شاید یہی وجہ ہے کہ وہاں ” اسپانسرڈ پتھر بازی“کے واقعات میں کمی آئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کے حالات کو معمول پررکھنے کی تمام کوششیں کی جا رہی ہیں۔اس سے قبل جنرل راوت نے قدیم شری کاشی وشوناتھ مندر میں درشن و پوجا کی۔ کل انہوں نے دشاشومیدھ گھاٹ پر عالمی شہرت یافتہ شام کی گنگا آرتی میں شامل ہوئے تھے ۔