عمر عبداللہ کا طنز ’خود مختاری کی گارنٹی کو کیوں فراموش کرتے ہیں

‘ اڑان نیوز
سرینگر //مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ ہنس راج اہیر کے اس بیان پر طنز کستے ہوئے کہ ” دستاویز الحاق کے تحت پاکستانی زیر انتظام کشمیر بھی بھارت کا حصہ ہے “ سابق وزیر اعلیٰ اور نیزنل کانفرنس کے کارگذار صدر عمر عبداللہ نے کہا ہے کہ اسی دستاویز کے اس حصے کے بارے میں وہ کیا کہتے ہیں جس میں ریاست کو خود مختاری کی گارنٹی دی گئی ہے ۔سماجی رابطہ سائٹ ٹویٹر پر پوسٹ کئے گئے ٹویٹ میں سابق وزیر اعلیٰ نے مزید کہا ہے کہ دستاویز الحاق ، جس کی رو سے جموں و کشمیر بھارتی وفاق کا حصہ بنا ،کرنسی ، مواصلات ، دفاع اور خارجی امور کے ماسوائے تمام اختیار ات ریاست کے پاس رکھے گئے تھے ۔انہوں نے لکھا ” لطف آتا ہے جب انہیں موافق آتا ہے ، وہ مہاراجہ کی طرف سے دستخط کئے گئے دستاویز الحاق کا حوالہ دیتے ہیں ۔ اس حصے کے بارے میں کیا جس یں جموں و کشمیر کی خودمختاری کا ذکر ہے “۔انہوں نے لکھا ” آپ دستاویز الحاق کے ان ہی حصوں کو ہی نہیں چن سکتے جو بھارتیہ جنتا پارٹی کی سیاست کو موافق آتے ہیں جب کہ باقی کو محو کر دیتے ہیں “۔