بانہال میں ایس ایس بی اہلکار رائفل سمیت گرفتار گزشتہ رات مقامی سیکورٹی گارڈ پر گولی چلا کر شدید زخمی کر دیا تھا

دانش وانی
بانہال// چاپناڑی علاقہ میں زیر تعمیر ریلوے ٹنل کی حفاظت پر مامور سشستر سیما بل (ایس ایس بی ) کے اس اہلکار کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے جس نے گزشتہ رات تعمیراتی کے ساتھ کام کر رہے ایک مقامی سیکورٹی گارڈ پر گولی چلا کر اسے شدید زخمی کر دیا تھا ۔اہلکار کے مطابق اس نے سیکورٹی گارڈ کو جنگجو ہونے کے مغالطے میں اس پر گولی چلا دی۔ پولیس نے اس کی سروس رائفل بھی ضبط کر کے تحقیقات شروع کر دی ہے ۔ یہ واقعہ گزشتہ دیر رات اس وقت پیش آیا جب تعمیراتی کمپنی کے ساتھ کام کر رہے مقامی سیکورٹی گارڈ شوکت احمد نائیک ولد غلام نائیک ساکنہ چاپناڑی پر ایس ایس بی کے اہلکار نے گولی چلا دی ۔ اسے فوری طور پر ایمرجنسی ہسپتال بانہال پہنچایا گیا جہاں پر ابتدائی طبی امداد فراہم کر نے کے بعد ڈاکٹروں نے اسے برزلہ ہسپتال سرینگر منتقل کیا-زخمی سیکورٹی گارڈ کے مطابق وہ رات کی ڈیوٹی پر تعینات تھا اور جب وہ کھانا کھانے کے لئے جا رہا تھا کہ اسی دوران وہاں موجود ایس ایس بی کے جوانوں نے ا±سے آواز دے کر اپنی طرف بلایا ۔سیکورٹی گارڈ کے مطابق جوں ہی وہ ایس ایس بی کے اہلکاروں کی طرف بڑھنے لگا کہ ان میں سے ایک ا±س پر تین گولیوں کا برسٹ ماراجو اس کے بائیں کند ھے پر لگا جس کی وجہ سے وہ وہیں گر پڑا۔واقعہ کی اطلاع ملتے ہی مقامی لوگوں کی ایک بڑی تعداد وہاں جمع ہو گئی اور ایس ایس بی کے خلاف احتجاج شروع کر دیا ۔ ایس ایچ او بانہال اعجاز وانی پولیس کی ایک ٹیم لیکر جائے وقوعہ پر پہنچے جب کہ بعد میں اے ایس پی رام بن مشتاق چودھری بھی رام بن سے پہنچ گئے اور مقامی لوگوں کو پوری قانونی کارروائی کرنے کا یقین دلا کر ان کا غصہ فرو کیا ۔انہوں نے زخمی گارڈ کو ابتدائی طبی امداد فراہم کر نے کے بعد سرینگر منتقل کرایا۔ پولیس نے اس معاملے میں ایس ایس بی 14 بٹالین اے کمپنی کے کانسٹبل امت چاٹیا کو گرفتار کر کے اس کی رائفل بھی ضبط کر لی ہے ۔ رابطہ کر نے پر ایس ایچ او بانہال اعجاز وانی نے بتایا کہ ایس ایس بی کے کانسٹبل کو گرفتار کر کے پولیس اس معاملے میں ضابطہ کارورائی کر رہی ہے ۔مقامی سیکورٹی گارڈ کے کندھے پر گولیاں لگ جانے کی وجہ سے اس کی ہڈی کو بھی نقصان پہنچا ہے –