حل کیلئے سنجیدہ ہیں ”دنیا کی کوئی طاقت بی جے پی کو مسئلہ کشمیر حل کرنے سے نہیں روک سکتی ہیں “: راج ناتھ سنگھ

سرینگر//مسئلہ کشمیر کو عنقریب حل کرنے کا ارادہ ظاہر کرتے ہوئے مرکزی وزیر داخلہ نے واضح کردیا کہ ”دنیا کی کوئی طاقت بی جے پی کو مسئلہ کشمیر حل کرنے سے نہیں روک سکتی ہے ©©“۔ انہوںنے کہا کہ موجودہ مرکزی حکومت نے سرحدوں پر تعینات فوج کو مکمل آزادی دی ہے کہ وہ ہمسایہ ملک کی جارحیت کا سختی کے ساتھ جواب دے ۔ مرکزی وزیر داخلہ نے کہاآ نجہانی وزیر اعظم پنڈت جواہر لال نہرو کی وجہ سے ہی مسئلہ کشمیر پیدا ہوا ،اگر اُس وقت سردار پٹیل کی بات مانی گئی ہوتی تو کشمیرکا مسئلہ کب کا حل ہوا ہوتا۔گجرات کے شہر سورت میں عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے واضح کردیا ہے کہ مسئلہ کشمیر حل کرنے کیلئے موجودہ حکومت سنجیدہ ہے۔ انہوںنے کہاکہ مودی کے دور حکومت میں ہی کشمیر کا مسئلہ حل ہوگا اور دنیا کی کوئی طاقت بی جے پی کو مسئلہ کشمیر حل کرنے سے نہیں روک سکتی ہے۔ وزیر داخلہ کے مطابق آنجہانی وزیر اعظم پنڈت جواہر لال نہرو کی وجہ سے ہی مسئلہ کشمیر پیدا ہوا۔ انہوںنے کہاکہ اگر جواہر لال نہرو اُس وقت سردار پٹیل کی بات مانتے تو مسئلہ کشمیر کب کا حل ہوا ہوتا ۔ انہوںنے کہا کہ پنڈت جواہرلال نہرو نے سردار پٹیل کی بات نہیں مانی جس کا ثمرہ یہ نکلا کہ مسئلہ کشمیر حل ہوتے ہوتے رہ گیا۔ لائن آف کنٹرول پر پاکستانی رینجرس کی گولہ باری کا سختی کے ساتھ جواب دینے کا ارادہ ظاہر کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہاکہ موجودہ مرکزی حکومت نے سرحدوں پر تعینات فوج کو مکمل آزادی دی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان کی طرف سے اگر ایک گولہ اس طرف آتا ہے تو ہماری افواج دس گولے فائر کرتے ہیں۔ راج ناتھ سنگھ کے مطابق حدمتارکہ اور لائن آف کنٹرول پر فوج کسی بھی جارحیت کا مقابلہ کرنے کیلئے تیار ہیں۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان نے بھارت کے خلاف درپردہ جنگ شروع کی ہے ۔ موجودہ مرکزی حکومت نے پاکستان کے ساتھ تعلقات بہتر بنانے کیلئے اقدامات اٹھائیں۔ وزیر اعظم ہند غیر سگالی جذبہ کے تحت پاکستان چلے گئے اور تعلقات بہتر بنانے پر زور دیا تاہم اس کے بدلے میں پاکستان نے فوجی بیس پر حملہ کیا ۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان کے ساتھ اُس وقت تعلقات بہتر نہیں ہوسکتے ہیں جب تک نہ وہ اپنی سرزمین بھارت مخالف سرگرمیوں کیلئے استعمال کرنے پر پابندی عائد نہیں کرتا۔ انہوںنے کہاکہ وزیر اعظم ہند نریندر مودی پاکستان کے ساتھ تمام مسائل پر بات چیت کرنے کیلئے تیار ہیں تاہم پاکستان کو اس کیلئے سازگار ماحول تیار کرنا پڑے گااور بھارت کی مثبت کوششوں کوجواب دینا چاہئے ۔ انہوںنے کہاکہ کشمیر کے بارے میں کسی کو پریشان ہونے کی ضرورت نہیں کیونکہ مرکزی حکومت نے وہاں پر آپریشن آل آوٹ شروع کیا ہے جس کے تحت فوج ، پیرا ملٹری فورسز نے گزشتہ دو تین مہینوں سے ایک سو سے زائد عسکریت پسندوں کو مار گرایا ہے جو ایک ریکارڈ ہے۔